سید ابن حسنسید ابن حسن یونیورسٹی آف تہران، ایران میں قانون کے طالب علم ہیں۔ شرعی سزاؤں کی افادیت اور نفاذ کے امکانات کے موضوع پر پی ایچ ڈی مقالہ لکھ رہے ہوں۔ ایم فل کا مقالہ بین الاقوامی فوجداری عدالت کے رکن ممالک کے وظائف اور اختیارات کے موضوع پر لکھا۔ دین و دنیا میں تفریق کے تصور کو رد کرتے ہیں۔ قانون کی حکمرانی، مساوات اور آزادی پر یقین رکھتے ہیں مگر یہ کہ آزادی پر قدغن کی کوئی واضح دلیل موجود ہو تو۔

مرتد کی سزا۔۔۔۔۔۔ ایک مختلف نکتہ نظر - سید ابن حسن

جرمن فلاسفر ہیگل نے کہا تھا میں دینِ یہود کو نہیں مانتا کیونکہ یہودی علما کے بقول خدا اور انسان کے درمیان آقا اور غلام کا تعلق ہے اور ایسا تعلق انسان کی تعلیم و تربیت پر کوئی اثر نہیں رکھتا۔مغربی فلاسفروں کی الہی ادیان سے مخالفت اس اور اس جیسی دلیلوں کی بنا پر ہے۔ اسے یہودی علما کی غلط تشریحات کا...