افشاں نویدروزنامہ جسارت میں کالم لکھتی ہیں۔ نوید فکر کے نام سے کالموں کا مجموعہ شائع ہو چکا ہے، اسی عنوان سے 5 ماہناموں میں تحاریر شائع ہوتی ہیں۔

بے شک میں ظالموں میں سے ہوں - افشاں نوید

سانسیں کچھ بے ترتیب ۔فون پر کئی دن بعد آواز سنی۔۔خیریت تو ہے؟میں نے دریافت کیا۔ بولیں۔۔خیریت کہاں؟تین سپر اسٹورز پر گئی اتنا رش ہے کہ قیامت۔جو ملا لے آئی۔شوہر نے آفس جاتے ہوئے کہا تھا آج تین ماہ کا راشن لے آنا۔بہت رش ہے بھائی!میدان جنگ کا سا سماں ہے۔ میں نے کہا واقعی ہم حالت جنگ میں ہیں ایسے میں...