عبدالخالق بٹعبدالخالق بٹ گزشتہ دودہائیوں سے قلم و قرطاس کووسیلہ اظہار بنائے ہوئے ہیں۔ وفاقی اردو یونیورسٹی کراچی سے اسلامی تاریخ میں ایم۔اے کیا ہے۔اردو ادب سے بھی شغف رکھتے ہیں، لہٰذا تاریخ، اقبالیات اور لسانیات ان کے خاص میدان ہیں۔ ملک کے مؤقر اخبارات اور جرائد میں ان کے مضامین و مقالات جات شائع ہوتے رہے ہیں۔

شهر خالی، جاده خالی، کوچه خالی، خانه خالی ۔ عبدالخالق بٹ

’کورونا‘ کے شور میں تاجکستانی گلوکارہ ’نگاره خالاوه‘ کی غزل کا زور ہے۔ جس کا مطلع ہے: شهر خالی، جاده خالی، کوچه خالی، خانه خالی - جام خالی، سفره خالی، ساغر و پیمانه خالی غزل میں کوچہ و بازار کی ویرانی کا ماتم اوردوستوں کی محفلیں اُجڑ جانے کا نوحہ ہے۔ نہیں معلوم اس غزل کے خالق ’امیرجان صبوری‘ کو کن...