یہ تو ایمان کا معاملہ ہے - خدیجہ برجیس

میں نے آپ کو پہلے بھی منع کیا ہے کہ بھائی کے بچوں کو ساتھ لے کر نا جایا کریں انکو تمیز نہیں ہے بات کرنے کی کہ بڑوں سے کس طرح بات کی جاتی ہے۔ "اففف میں تو شرمندہ ہو کر رہ گئی آج تو بہت بےعزتی ہو گئی سارہ کے گھر" بہو آہستہ لہجے میں بات کرو بچو نے ایسا کیا کر دیا کہ تم کو بےعزتی محسوس ہونے لگی!!

" الحمداللّہ میرے ان بچوں کی تربیت بہت بہترین انداز سے ہوئی ہے مجھے اپنے پوتوں پر فخر ہے" یقیناً تمہیں کوئی غلط فہمی ہوئی ہے یہ بچے کبھی کوئی ایسا کام نہیں کر سکتے جس کی وجہ سے کسی کو شرمندہ ہونا پڑے۔بس آپ کو تو انکے علاوہ کچھ نظر ہی نہیں آتا اور تم دونوں دادی کے سامنے ایسے معصوم بن جاتے ہو جیسے کچھ کیا ہی نہ ہو ۔بہو بحث سے بہتر ہے کہ تم اصل بات بیان کرو۔ضرور آج آپ کے ان چہیتوں نے سارہ کے ہاں ناشتے کی ٹیبل سے کچھ بھی لینا اپنی توہین سمجھا اس بیچاری نے کتنی دفعہ اصرار کیا لیکن مجال کہ کوئی چیز لے لیتے اور اسکے زیادہ اصرار پر اسکو لیکچر دے کر شرمندہ کردیا یہ سیکھایا گیا ہے ان لوگوں کو کہ اپنے بڑوں کو لیکچر دینگے۔

چاچی آپ غلط سمجھ رہی ہیں ہم نے ایسا کچھ نہیں کہا۔۔۔۔۔۔۔ہاں ہاں بس رہنے دو بہت اچھے سے جانتی ہوں تم جیسے اسلام کے دعویداروں کو !!!بس بہو چپ ہو جاو بچوں میرے پاس آو کیا بات ہوئی ۔۔۔۔۔۔اور اگر کچھ غلط ہو بھی گیا ہے تو معافی مانگ لینے میں کوئی مضائقہ نہیں۔دادی امّی بات معافی کی ہے ہی نہیں یہ تو ہمارے ایمان کا معاملہ ہے یہ تو اصل محبت کا امتحان ہے دادی امّی ہم کیسے وہ چیزیں اپنے حلق سے اتار سکتے ہیں جو ان ممالک سے بن کر آتی ہیں جو روز میرے نبی محمدؐ کی شان میں گستاخی کرتے ہیں ۔دادی امّی وہاں سب چیزیں ہماری پسندیدہ تھیں لیکن انکو دیکھ کر ہمیں گھن آرہی تھی ۔"دادو بھیا صحیح کہہ رہا ہے وہاں میرے پسندیدہ اوریو بسکٹ اور کری چیز تھی اور بھیا کے پسندیدہ پرنس بسکٹ بھی تھے" پر دادو ہم کیسے ان چیزوں کو ہاتھ لگاتے جو ان ہاتھوں سے بنی ہوں جو میرے پیارے نبیؐ کے گستاخانہ خاکے بناتے ہیں جو میرے نبی کا مزاق اڑاتے ہیں ۔بس رہنے دو تم ثابت کیا کرنا چاہتے ہو کیا سارہ مسلمان نہیں ہے ۔

بس بہو افسوس تو مجھے تم پر ہو رہا ہے کہ تم اللّہ کو کیا جواب دوگی ۔ "فخر ہے مجھے اپنے بچوں پر اور انکی تربیت پر کہ چند بسکٹ کے ٹکڑوں پر اپنے ایمان کو معتبر رکھا رب العزت کی بارگاہ میں اپنی گواہی لکھوادی کہ کسی بھی صورت اپنےنبی محمدؐ کی گستاخی برداشت نہیں کریں گے۔""یہی تو میرے نبیؐ سے محبت کا ثبوت ہے کہ دیکھا بھی نہیں پر تن، من، دھن آپؐ پر فدا۔"بہو تمہیں تو بچوں کا شکر گزار ہونا چاہیے کہ یہ بچے ہماری بخشش کا سامان ہے شاید ہم اس دنیا کی چکاچوند میں اپنا حق ادا کرنا بھول گئے لیکن ان معصوموں نے ہمیں یاد کرادیا کہ
"میرے نبیؐ سے میرا رشتہ کل بھی تھا اور آج بھی ہے" اللّہ ربّ العزت سے دعا ہے کہ ہماری کاوشوں کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمالے(آمین)

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
/* ]]> */