زندگی - خولہ زبیری

وہ بال شانے پہ پھیلائے ٹیرس میں بیٹھی تھی۔زندگی ایک ہی ڈگر پہ چلتی ہی جارہی تھی ۔اسے زندگی کا کوئی مقصد یا اس روٹین کا کوئی اختتام یا نتیجہ نظر نہیں آرہا تھا۔اس کے پاس مال و دولت کی فراوانی تھی۔ بے حد پیار کرنے والا خاندان تھا۔وہ ہمیشہ سے ہی ذہین اور سمجھدار تھی، اس نے اس نے اپنے امتحانات بھی بہترین نمبروں سے پاس کر لیے تھے، آج ہی اس کا نتیجہ آیا تھا۔۔۔! اتنی آساۂشوں اور نعمتوں کے بعد بھی وہ بے چین تھی۔اب جب اس نے امتحانات میں بھی کامیابی حاصل کرلی تھی جو کہ اس کی زندگی کا سب سے بڑا خواب تھا لیکن ابھی بھی اس کے سامنے زندگی کا کوئی مقصد واضح نہیں ہورہا تھا۔

کیا زندگی دولت حاصل کرنے کا نام ہے؟ لیکن صرف مال و دولت کے غرض سے تو کوئی اتنی بڑی زندگی ضائع نہیں کرتا۔اچھا تو کیا زندگی بڑی ڈگری لینے کا نام ہے لیکن ڈگری لینے کے بعد۔۔۔۔؟ ڈگری لینے کے بعد زندگی کس چیز کا نام ہے۔۔۔؟ گھر بار حاصل کرنے کا؟ لیکن گھر بار حاصل کرنے کے بعد۔۔؟ اس کے بعد زندگی کا مقصد۔؟ اچھا تو کیا زندگی صرف پیدا ہونے کا کھانے، پینے،اُٹھنے،بیٹھنے اور مزے کر کے ختم ہوجانے کا نام ہے۔۔۔۔؟ لیکن نہیں اِتنی بڑی زندگی کا کوئی مقصد تو ہوگا ہی۔۔۔۔وہ اِس ہی کشمکش میں مبتلا تھی خود ہی سوال اور خود ہی جواب دیے جارہی تھی۔ جب کوئی خاطر خواہ جواب نہ ِمِلا تو وہ روز کی طرح فیس بک کھول کر بیٹھ گئی۔۔۔۔اسکرالنگ کرتے کرتے نت نئ خبروں اور اداکاروں کی تصاویر سے بھی اُکتا گئی تو آخر میں ٹویٹر کھول لیا۔

*"اور ہم نے انسان کو اِس کے سِوا* *کسی چیز کے لیے پیدا نہیں کیا کہ وہ* *ہماری عبادت کریں"*

*( القرآن )*

ٹویٹر کھولتے ہی اِس کے دماغ میں روز پیدا ہونے والے سوال کا جواب موجود تھا۔۔۔۔۔ آنکھیں ایک پل کو ساکت ہوۂیں ، لگا کے اللّٰہ اسی سے مخاطب ہو ۔۔۔۔ جیسے آیت اُسی کے لیے ہی اُتری ہو۔۔۔۔جیسے یہ آیت اللہ نے خاص طور پہ سارہ احمد کے کیے نازل ہوئی ہو۔۔۔ وہ تو زندگی کا مقصد دنیا کی فانی آسائشوں میں تلاشتی رہی۔لیکن زندگی کا مقصد بہت بلند تھا۔۔۔!! مقصد تو لافانی تھا۔۔۔۔!!

اوہ! اچھا تو زندگی اللّٰہ کے لیے جینے اور اپنا اُٹھنا،بیٹھنا،سونا،جاگنا اُسی کے نام کردینے کا نام تھی۔۔۔۔ زندگی تو اللّٰہ کی محبت کے بدلے سب کچھ بیچ دینے کا نام تھی اور وہ زندگی کو کتنی معمولی سی چیز سمجھ بیٹھی تھی۔اصل زندگی تو ایک بہترین موقع تھی۔ اللّٰہ کے قریب ہونے کا ! پس اللّٰہ جیسے چاہے ہدایت بخشے۔

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
/* ]]> */