فیشن کی حکمرانی - ردا بشیر

فیشن کے بدلتے رجحانات دنیا بھر کی خواتین اور مردوں کو متحد رکھتے ہیں۔ کہتے ہیں کہ انسان ” سماجی حیوان“ ہے۔ قدرت نے کسی نہ کسی بہانے ان سب جانوروں، میرا مطلب لوگوں کو جوڑ رکھا ہے۔ ”فیشن“اور ”سیاست“ دو ایسی چیزیں ہیں جس نے گلوب کو جوڑ رکھا ہے۔ ہمارے ہاں کی خواتین کے پاس کچھ کھانے کے لیے ہو نہ ہو، لیکن فیشن میں کیا ٹرینڈ چل رہا ہے وہ ازبر ہوتا ہے۔ اسٹار پلس کے ڈرامے کی فلاں ہیروئین نے فلاں ڈرامے میں کیا کنٹراس لیا ہے، سب معلوم ہوتا ہے۔

لوگوں کی شناخت ان کے لباس سے کی جاسکتی ہے۔ لباس کا چناؤ شخصیت کا آئینہ دار بھی ہوتا ہے۔ میرا اپنا شمار ان لوگوں میں ہوتا ہے جو کسی شخص کا لباس دیکھ کر گہرا اثر لیتے ہیں اور اس بارے میں سوچتے ہیں۔ میرے حلقے میں ایسے لوگ اور جان سے پیارے دوست موجود ہیں جو صرف پینتالیس ہزار کے ایئر بڈز اور 38000 کے بوٹ ہی پہن چھوڑتے ہیں۔ بات ہے جناب فیشن اور شوق کی۔ فیشن اتنا اہم ہے کہ پورے کے پورے رسائل اس کے لیے وقف ہوجاتے ہیں۔ ٹی وی پروگرام موضوع کے لیے ٹرانسمیشن کے اوقات کار وقف کرتے ہیں۔ اور لوگ مستقل طور پر دوستوں کے مابین اس پر تبادلہ خیال کرتے ہیں۔

جدید ترین فیشن کو جاری رکھنے کے لیے لوگ فیشن چینلز کو سبسکرائب کرتے ہیں۔وہاں کیا شائع ہو رہا ہے اور دنیا فیشن میں کہاں ہیں یہ جاننے کی کوشش کرتے ہیں اور پھر خود کا فیشن کی دنیا سے موازنہ کرتے ہیں کہ وہ فیشن کے دور میں کہاں موجود ہیں۔ انتہائی دولتمند افراد اپنا ذاتی عورت نما مرد فیشن ڈیزائنر رکھتے ہیں۔ مشہور شخصیات کیا پہنتی ہیں، ان کا پہنا ہوا کچھ بھی بہت زیادہ شہرت رکھتا ہے۔ چاہے وہ کیسا بھی ہو۔

کچھ عرصہ پہلے ایک انتہائی فضول فیشن دیکھنے میں آیا کہ لڑکے پینٹ یوں باندھتے تھے کہ کچھ اٹھانے زمین پر جھکے تو نظریں مارے شرم کے زمین میں گڑھ جائیں۔ نہیں مطلب یہ فیشن ہے کہ کیا؟ جسے دیکھ کر یہ فیشن اپنایا گیا۔ کیا معلوم ہو اس کے پاس بیلٹ باندھنے کا ٹائم نہ ہو اور ہم کھوتے گھوڑے کھانے والی قوم اندھوں کی طرح تقلید کرتی نظر آئیں۔ فیشن وہ جو سب کو بھائے۔ اب ایک فیشن آیا ہے اور چل بھی رہا ہے پھٹی ہوئی پینٹ پہننے کا۔ اب میرا حقیر ذہن کہتا ہے کہ کیا پتا جس نے یہ فیشن ایجاد کیا ہو، وہ بیچارا بجری والی کھردری زمین پر گرا ہوا اور پینٹ پھٹنے کے ساتھ ساتھ گھٹنا بھی آلو کی طرح چھلا ہو، لیکن اس نے مارے شرم کے کسی سے ذکر نہ کیا ہو اور ہم پھر اندھوں کی طرح پیچھے لگ گئے میرے اپنے بھائی بلیڈ کی مدد سے پینٹ پھاڑتے نظر آتے ہیں۔

میں نے بڑے سے بڑا فیشن دیکھا اور اچھے سے اچھا بھی جو بھی فیشن پر کام کرتا رہے گا معاشرے میں طویل عرصہ تک اپنا بالادست مقام قائم رکھے گا۔ آنے والا وقت یہ نہ صرف جو ہم پہنے ہیں بلکہ جو کچھ ہم کرتے ہیں دیکھتے اور سوچتے ہیں اس پر بھی گہرا اثر ڈالتا ہے۔ ہر چیز میں فرنیچر،پینٹ الغرض زندگی کے ہر پہلو میں فیشن پیش پیش دکھائی دیتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ واقعی فیشن دنیا پر راج کرتا ہے اور کرتا رہے گا۔

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
/* ]]> */