مفتی تقی عثمانی کیلئے خط - سید سلیمان احمد

السلام و علیکم

جناب حضرت مفتی تقی عثمانی صاحب ! آج نیوز میں پڑھا کہ دارالعلوم نے ارتغال ڈامے کے خلاف فتویٰ دے دیا ۔ یہ آپ نے بہت اچھا کیا ۔ مگر جناب اگر آپ ملک میں چلنے والے دوسرے چینلز پر دکھانے والے بے حیا ڈراموں پر بھی فتویٰ دیں تو اچھا ہوتا اور ان ڈراموں کے خلاف بھی کوئی صدا بلند کرتے ! ہمارے مفتی صاحب ماشاء اللہ بہت زبر دست کام کررہے ہیں مگر برائی کے خلاف آواز نہیں اٹھاتے اور میدا ن میں بھی نہیں آتے ۔

لوگ بیچارے مہنگائی سے مر رہے ہیں اور بجلی کے بل کے بوجھ تلے دب رہے ہیں مگر بحیثیت مفتی اعظم آپ لوگوں کی آواز نہیں بن رہی ، آپ لوگ بینک میں ہی اتنے مصروف رہتے ہیں اور یہ بینکس بھی بے چارے غریبوں کی بہت خدمت کر رہے ہیں ۔ اب ان کو تو دکھانا ہے نا مفتی صاحب کو ! مفتی صاحب نے اپنا دارالعلوم بہت شاندار بنایا ہے ۔ماشاء اللہ اورجو نیا نیا پرشکوہ مینارا بنایا ہے اس کے تو کیا کہنے ہیں ! دور سے ہی نظر آجاتا ہے ! میرے خیال سے 50لاکھ سے ایک کروڑ کا تو ضرور بنا ہوگا ۔ حضرت عمر بن خطاب نے 22لاکھ مربع کلومیٹر پر حکومت کی ! مگر پھر بھی پیوند لگے کپڑے ، اگر غلام نے 16کلو میٹر دور سے مچھلی لانے کیلئے گھوڑا استعمال کر لیا تو اللہ کے خوف سے حضرت نے ساری مچھلی غریبوں میں بانٹ دی کہ میری خوشی پوری کرنے کیلئے گھوڑے کو گرمی میں16کلو میٹر چلا یا ! میں اللہ کو کیا کہوں گا ؟ حضور آپ اپنے دارالعلوم میں اور بینکس میں مگن ہیں ۔

اسکول بھی ما شاء اللہ خوب چلتا ہے ! فیس بھی ٹھیک ٹھاک ہے ! اگر کوئی بچہ فیس ٹا ئم پر نہ دے سکے تو آپ لیٹ فیس تو لیتے نہیں ہونگے یہ تو ناجائز ہو جائے گا ! لیکن آپ داخلہ منسوخ کرکے نئے داخلے کی فیس وصول کر لیتے ہیں ۔ یہ صحیح اسلامی طریقہ ہے ؟ حضور والا ! قوم کو آپ کی ضرورت ہے انکی آواز بنیں اور میدان میں نکلیں ! کیونکہ آپ کے ساتھ لاکھوں لوگ آجائیں گے ۔ سیاست میں آئیں ! حکمرانی میں آئیں ! جو سنت رسول ہے ۔ اسکے بغیر آپ معاشرے کو نہیں سدھار سکتے ۔

بینکس کی معلومات اور اسکول اور مدرسے کے معاملا ت تو کوئی اور بھی سنبھال لے گا ۔ اللہ نے آپ کو بڑی عزت دی ہے ۔ آپ کو بڑے معاملات کیلئے پسند کیا ہے ۔ آپ جیسی ہستی روز روز نہیں پیدا ہوتیں ۔ آپ اپنی طاقت عوام کے حلف کے لئے استعمال کریں ۔ عوام بہت پریشانی میں ہے ۔ اپنے عہدے کا بھرپور فا ئدہ اٹھا کر وقت پر عوام کی پریشانی کو دور کرنے کی بھرپور کوشش کیجئے۔

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
/* ]]> */