کورونا اور انسان کی جنگ تاریخ کی نظر میں - حافظ نعیم

کورونا وائرس نے دنیا کو ہلا کر رکھ دیا ہے,بڑے بڑے سپر پاور اس کے آگے سر خم تسلیم کرچکے ہیں,ہر طرف افراتفری کا عالم ہے,انسان ایک ان دیکھی چھوٹی جسامت رکھنے والی مخلوق سے اپنے آپ کو آئیسولیشن میں رکھے ہوا ہے.

جس نے پورے عالم میں اپنی شہرت کے جھنڈے گاڑ دیئے ہیں,سائنسدانوں کو پریشان کر دیا ہے,ڈاکٹر اینڈ فیملی کو موت کے کنارے لا کھڑا کیا ہے,پوری انسانیت کو اپنے سحر میں جکڑ کر رکھ دیا ہے,بنیادی طور پہ کورونا وائرس کا تعلق "کورونا"خاندان سے ہے,جس کے ماسوائے جدید کورونا (موجودہ وائرس)کہ تمام افراد انتہائی تہذیب و اخلاق والے ہیں,جو انسان سے اگر روٹھ جاتے ہیں تو بہر حال مان جاتے ہیں .

لیکن اپنے کورونا Covid-19 کی ناراضگی کی تو بات ہی کچھ نرالی ہے,انسان سے کچھ ایسے روٹھا ہے کہ اپنی فورس کے ذریعے اس کو گھر میں نظر بند کردیا ہے,جب تک انسان صفائی ستھرائی کا خیال نہ رکھے اس کی جان ہی نہیں چھوڑتا,سب سے پہلے اس کی عداوت انسان کے بجائے مرغیوں سے تھی جو 1930ء میں شروع ہوئی,دس سال مرغیوں پہ اپنا تسلط جمائے رکھنے کے بعد جب چوہے ان کی سرحد کے قریب واقع ہوئے اور کورونا کو ٹیکس دینے سے انکار کر ڈالا تو 1940ء میں ان پر حملہ کرکہ زیر تسلط کردیا,پھر اس نے آہستہ آہستہ اپنی فوج کو بڑھادیا حتی کہ خنزیر کو بھی اپنی صف میں شامل کردیا,پھر حرص بڑھتا ہے تو بڑھتا ہی چلا جاتا ہے .

آخر کار اس نے اپنے طاقتور ترین فوجی دستے "خنزیر" کے ذریعے انسانوں پہ حملہ آور ہونے کی ٹھان لی,چنانچہ اس نے 1960ء میں انسانوں پہ شدید حملہ کر ڈالا,شدید مزاحمت کے بعد انسان نے "کورونا"کو شکست دی اور اس کو تاحیات اپنا اسیر بنالیا,انسانوں کے خلاف حملے میں مخالف صف کی قیادت کمانڈر E229/Oc43 نے کی تھی,1960ء کی شکست کے بعد کورونا انسان سے جنگ کے لئے ایک بار پھر 2003ء میں کمانڈر "Sars-cov" کی کمانڈ میں ایک بار پھر انسان سے صف آزما ہوا لیکن بد نصیبی سے ایک بار پھر انسان فتح یاب اور "کورونا"شکست خوردہ ہوا,اور اس کے ہزاروں سپاہی مارے گئے,اور اس کی پوری فوج کا شیرازہ بکھر گیا,لیکن کورونا نے کہاں شکست ماننا تھی وہ ایک بار پھر 2004 اور 2005ء میں کمانڈر "Havoc Nl63 اور Hku1" کی قیادت میں انسانوں پہ حملہ آور ہوا لیکن بدقسمتی سے وہ اس جنگ میں بھی شکست خوردہ ہوا.

پے درپے شکستوں کے بعد اس نے ایک بار پھر 2012ء میں انسانوں پہ حملہ کر ڈالا جس کی قیادت کمانڈر "Mers-covd "نے کی بد قسمتی سے اسے اس جنگ میں بھی انسان نے شکست سے دوچار کیا,یہ سب اپنی تمام تر مساعی کے باوجود انسان کے خلاف ناکام ٹہرے,اس کے بعد وہ ایک مرتبہ پھر اپنی پوری توانائیوں کے ساتھ 2019ء میں"Covid-19" کمانڈر کی قیادت میں انسان پہ چاروں اطراف سے حملہ آور ہوا ہے, حال ہی میں چھڑنے والی اس جنگ میں اس کو اپنی پیچیدہ میوٹیشن کی وجہ سے انسان کے دفاعی نظام کو کنفیوز کرنے کی صلاحیت حاصل ہے یہی وجہ اسکے پھیلنے کی رفتار کو بہت زیادہ بڑھا چکی ہے اسی لیے اس پر قابو پانے میں پوری انسانیت کو دشواری کا سامنا ہے,تاحال یہ معرکہ انسان اور کورونا کے مابین جاری ہے.

کیا کورونا فیملی اپنی تاریخ بدلنے جا رہی ہے؟

کیا انسان اس سے اپنی جان چھڑا پائے گا؟

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com