ڈاکٹر ذاکر نائیک - فیض اللہ خان

ڈاکٹر ذاکر نائیک داعی ہیں کوئی مجاہد یا سیاسی راہنماء نہیں کہ ان سے استقامت یا ہند سرکار کے سامنے کھڑے ہونے کی توقع ہو لیکن آپ دیکھیں ساری زندگی اسلام کی دعوت پیش کرنے والے شخص پہ جب ہند سرکار نے زندگی جہنم بنا دی دعوتی ادارے تباہ کردئیے وہ ہجرت پہ مجبور اور پریشانیو میں مبتلا ہوئے تو اب ہند سرکار نے ان سے رابطہ کیا کہ آپکے سارے معاملات صاف شفاف کرکے وطن واپس آنے دیں گے اپنا کام بھی کریں مقدمات بھِی نمٹ جائیں گے چینل بھِی چل پڑے گا بس کشمیر کی حیثیت بدلنے کی زبانی حمایت کردیں ۔۔۔۔

کہنے کو یہ چھوٹی سی قیمت تھی جب ہند میں مسلمانوں کی نمائندگی کرنے والے بڑے بڑے گروہ ہند سرکار کیساتھ ہیں پاکستان جمعے جمعے کے احتجاج { اب تو وہ بھِی نہیں رہا } سے کام چلا رہا ہے ایسے میں ڈاکٹر ذاکر نائیک نے امام احمد بن حنبل اور امام ابو حنیفہ کی یاد تازہ کردی ہند سرکار کے نمائندے کو یہ کہہ کر واپس کردیا کہ اپنے واسطے کوئی ذاتی مفاد نہیں چاھئیے یہ ہجرتیں مقدمات کاروباری نقصان قابل قبول ہے مگر کشمیر پہ آپکے موقف کی تائید ناممکن ہے ۔۔۔۔۔۔۔پاکستان میں ووٹ کو عزت دو ٹائپ کے نعرے لگانے والے جغادری سیاست دان اس ذاکر نائیک سے بہت کچھ سیکھ سکتے ہیں جو سیاست کا شہسوار اور سرکاری مناصب سے لاکھوں نوری سال فاصلہ رکھنے کے باوجود اسقتامت عزم اور حوصلے کی ایسی مثال قائم کر گیا کہ اسے تادیر یاد رکھا جائیگا ۔۔۔۔ڈاکٹر صاحب آپ داعی تھے واعظ ہیں مناظر ہیں اور ایسے لوگ سرکاری مشکلات سے دور ہی رھتے ہیں لیکن آپ نے نئی مثال قائم کرکے جو کہ درحقیقت ہمارے اسلاف کی ہی یاد ہے ، ہمارے دل جیت لئِے ۔۔۔۔آپ سے فی اللہ محبت پہلے بھی تھی لیکن اس عمل کے بعد تو آپ کو وہ مقام ملا ہے جس کا بدل صرف خدا ہی دے سکتا ہے ۔۔۔ہمارے نیک تمنائیں دعائیں اور محبتیں آپکے واسطے

Comments

فیض اللہ خان

فیض اللہ خان

فیض اللہ خان 11 برس سے رپورٹنگ کر رہے ہیں۔ طالبان سے متعلق اسٹوری کے دوران افغانستان میں قید رہے، رہائی کے بعد ڈیورنڈ لائن کا قیدی نامی کتاب لکھی جسے کافی پذیرائی ملی۔ اے آر وائی نیوز کے لیے سیاسی، سماجی، عدالتی اور دہشت گردی سے متعلق امور پر کام کرتے ہیں۔ دلیل کے ساتھ پہلے دن سے وابستہ ہیں۔

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com