ترقی یافتہ ممالک کی فہرست میں سعودی عرب کہاں کھڑا ہے؟

ریاض: اقوام متحدہ نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ سعودی عرب نے افرادی قوت کے حوالے سے بے حد ترقی کی ہے اور اس حوالے سے یہ دنیا بھر میں 36 ویں نمبر پر آگیا ہے۔سعودی اخبار کے مطابق اقوام متحدہ نے اپنی رپورٹ برائے افرادی قوت میں سعودی عرب کو 189 ممالک میں 36 ویں نمبر پر رکھا ہے، جبکہ عرب دنیا میں سعودی عرب دوسرے نمبر پر آگیا ہے۔

اقوام متحدہ کے ترقیاتی پروگرام برائے 2019 کی فروغِ افرادی قوت کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب افرادی قوت کے لحاظ سے انتہائی ترقی یافتہ ممالک میں شامل ہو گیا ہے۔سعودی عرب جی 20 ممالک میں ترقی کے حوالے سے دسویں نمبر پر آگیا ہے۔ اس سے قبل سنہ 2018 میں سعودی عرب 3 درجے پیچھے تھا۔

اقوام متحدہ کے مطابق فروغ افرادی قوت، کسی ملک میں مساوات، انصاف اور خوشحالی کا ثبوت ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب نے سنہ 1990 سے 2018 کے دوران افرادی قوت کے حوالے سے غیر معمولی ترقی کی ہے۔فروغ افرادی قوت کی رپورٹ میں دنیا بھر کے ممالک کو 4 گروپوں میں تقسیم کیا جاتا ہے، ایک گروپ میں وہ ممالک ہیں جن کے یہاں افرادی قوت کا فروغ 0.550 سے کم ہوتا ہے۔

دوسرا گروپ متوسط فروغ افرادی قوت والے ممالک کا ہے جن کا گراف 0.550 سے لے کر 0.699 کے درمیان پایا جاتا ہے۔تیسرے گروپ کے ممالک اعلیٰ فروغ افرادی قوت والے ممالک کہلاتے ہیں جن میں افرادی قوت کے فروغ کا گراف 0.700 سے 0.799 کے درمیان ہوتا ہے۔چوتھا گروپ بے حد ترقی یافتہ افرادی قوت والے ممالک کا ہے۔ ان میں ترقی کا گراف 0.800 اور اس سے زائد کا ہوتا ہے۔