انصافی متوجہ ہوں، ظلم کا ساتھ مت دیں - محمودفیاضؔ

میں انتہائی افسوس کے ساتھ تمام ایسے دوستوں کو مینشن کر رہا ہوں جو میری لسٹ میں تحریک انصاف کی اس حکومت کے بارے میں اچھا گمان رکھتے ہیں۔کاشانہ دارالامان کی یہ ویڈیو میں ایک واقعے کے طور پر شئیر نہیں کر رہا بلکہ آپ کو یہ بتانا چاہ رہا ہوں کہ اگر یہ واقعات پنجاب کے اس شہر میں ہو رہے ہیں جہاں پنجاب اسمبلی چند منٹ کے فاصلے پر ہے۔

جہاں چیف منسٹر رہتا ہے (یا رہنا چاہیے)۔ جہاں پنجاب پر حکومت کرنے والی تمام کی تمام کابینہ رہتی ہے۔ اور جہاں ہونے والے واقعات اصل میں یہ بتاتے ہیں کہ دوردراز کے علاقوں میں اس سے بدترین صورتحال ہوگی۔

تفصیل واقعے کی آپ کو اس ویڈیو (لنک کامنٹس میں) میں بھی مل جائیگی، اور دیگر خبروں میں بھی۔ میں صرف پوائنٹس لکھتا ہوں۔
۔ دارالامن میں یتیم بچیوں پر ظلم ہوتا ہے، انکی عزتیں لٹتی ہیں
۔ ادارے کی سپرٹنڈنٹ کو زبان کھولنے پر نوکری سے برخاست کیا جاتا ہے۔
۔ ادارے کی سپرٹنڈنٹ کو پولیس کے ذریعے گرفتار کرنے یا دھمکانے کا اقدام کیا جاتا ہے۔
۔ ادارے کی سپرٹنڈینٹ کو اسکی سرکاری رہائش سے نکالنے کا حکم جاری ہوتا ہے۔
۔ اس تمام واقعے کے پیچھے حکومتی وزیر کا نام خود سپرٹینڈینٹ لے رہی ہے۔
۔ ادارے کے بچیوں کو میڈیا پر آنے سے روکا جاتا ہے۔

انصافی دوست کہتے ہیں کہ اس حکومت کے خلاف پروپیگنڈہ ہوتا ہے۔ ہوتا ہوگا۔ مگر ان تمام حالات پر غور کر لیں۔ صوبے کی حکومت تحریک انصاف کی ہے۔ وزیراعلی کے علاوہ چھتیس ترجمان موجود ہیں، اور کابینہ کے وزرا کی فوج بھی۔ خود وزیراعلی کے اختیار کو وزیر اعلی سے زیادہ اس کا خاندان، اور تحریک انصاف کے دیگر افراد استعمال کر رہے ہیں۔ عمران خان خود پچھلے ہفتے میں متعدد بار وزیر اعلی سے مل چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   فارن فنڈنگ کیس کی ریس - محمد طیب زاہر

ان تمام حالات کے درمیان اگر یہ "پروپیگنڈہ" نون لیگ، شہباز شریف یا نواز شریف کی ہمدرد لابی کر رہی ہے، تو میں پوری ایمانداری سے عرض کرتا ہوں کہ پھر حکومت کرنے کا حق بھی انہی کا ہے۔

اور اگر آپ کی پنجاب میں اس قدر موجودگی، آگاہی، اور ایکٹو ہونے کے باوجود ایک ادارے میں یتیم بچیاں لٹ رہی ہیں، اس پر رپورٹ ہو رہی ہے، رپورٹ کرنے والی کے خلاف سرکاری ادارے حرکت میں ہیں، اور آپ اس میں ملوث نہیں تو اس سے زیادہ مجہول و معذور حکومت میں نے اپنی زندگی میں نہیں دیکھی۔

انصافی دوستوں سے، خاص طور پر اوورسیز سے صرف اتنا کہنا ہے کہ یہ سب پروپیگنڈہ نہیں ہے۔ زمینی حالات اس سے کہیں زیادہ خراب ہو چکے ہیں جتنے ابھی تک میں نے آپ کے سامنے رکھے ہیں۔ کل جب کاشانہ کی پہلی ویڈیو شئیر کی تب سے اب تک بھی بہت سے دوستوں نے کبھی اسکو فیک ویڈیو کہا، کبھی دو سال پرانی ویڈیو کہا۔ میرا ان سب سے صرف یہ کہنا ہے کہ آپ نے ایک ایسی پارٹی سے حکومت لی ہے، جس کے فالوورز پر آپ ہنسا کرتے تھے کہ وہ اپنی پارٹی کی ہر برائی کا ڈھٹائی سے دفاع کرتے تھے۔ میری امید ہے کہ آپ ایسا نہیں کریں گے۔

یہ حکومت گورننس کے معاملات میں بری طرح ناکام ہو چکی ہے، اکانومی و دیگر معاملات میں بہتری حکومت کا صرف ایک حصہ ہے اور اس پر بھی ابھی شکوک کے سائے ہیں۔ مگر گورننس میں نون لیگ اور پیپلز پارٹی کی حکومتوں بری مثالیں ہم ایک سال ہی میں دیکھ چکے ہیں۔

خدا کے لیے حالات کو انکے درست تناظر میں سمجھیں اور آواز اٹھائیں۔