کیا کہنے - زرین تارڑ

9 نیازی صاحب دل نہں مانتا کہ اپکو پاکستان کا ( وزیراعظم ) کہا یا مانا جاۓ ہمیں شرم آتی ہے .یہ دن دیکھانے کیلیے اپ نے 22 سال اقتدار حاصل کرنے کی کوشش کی .اپ کے یہ پلان تھے قادنیوں اور سکھوں کے دل جیتنے تھے تو پاکستانی عوام کو سہانے سپنے کیوں دیکھاۓ 22 سال لوگوں کو چکما دیتے رہے جھوٹے خواب دیکھاتے رہے جو ریت کی دیوار ثابت ہوۓ 2013 تا 2014 اپ لوگوں کو 8 روپے فی یونٹ بل جلانے کا مشورہ دیتے تھے اور بل جلاے بھی گئے ۔

اب جبکہ بجلی 20 روپے فی یونٹ ہے اب احساس نہں کہ جو غریب اور مزدور ہیں کیسے بل دیں گے پٹرول 65 روپے لیٹر پر مہنگائی کا نام لیتے تھے اب کوٸی خبر ہے مہنگائی طوفان بن چکی ہے سبزی غریب کی پہنچ سے باہر ہے اپ نیازی صاحب اپنی اقتدار سے پہلے کی تقریریں سناکریں زمین آسمان کافرق نظر آے گا صرف اپ کے 18 ماہ کے دور حکومت نے مہنگائی کا گراف ڈبل کیا ہے اتنی تیزی سے عوام کا جینا دوبھر کر دیا ہے . کنٹینر پر چڑھ کر عوام کو چکما دیا دھوکا دیا جھوٹی ہمدردی کے خواب دیکھاے نیازی صاحب اپ بھی اسی ملک میں پیدا ہوے پلے بڑے ہوے اس ملک کا دانا پانی کھا کر پروان چڑھے پڑھے لکھے کرکٹ کھیل کر دولت شہرت کماٸی اسی ملک میں چھیک کیا اسی ملک کے باسیوں کو بے روزگار کیا دوکانیں پلازے گھر مارکیتیں گراٸیں ملیں فیکڑیاں کارخانے بند تاجر بزنسمیں چیخ اٹھے ہیں تو سوچیں غریب تو پھر بھوکا ہی سوتا ہوگا اپنے اکانوی اور معیشت کا بیڑا غرق کر دیا ہے لوگوں کا سانس لینا مشکل ہو گیا ہے ۔

نیازی صاحب اپکی شادی یہودیوں میں ہوٸی اپکی اولاد بھی وہیں جوان ہوٸی کبھی کبھی شک ہوتاہے کہ اپ مسلمان بھی ہیں یا نہں اپکے دل ودماغ سوچ نے کل کرتارپور کھول کر عیاں کر دیا ہے کہ اپ 22 سال سے اقتدار کی جہدو جہد کیوں کر رہے تھے اپ شاہد 2 مرتبہ عمرہ ادا کرنے گٸے وہاں اپنے سرپر ٹوپی نہں پہنی . مگر کرتارپور کے کھولنے پر اپ نے سکھوں والا روپ دھار کر اپنی سوچ اور مقصد واضع کر دیا ( جتھے دی کھتی اتھے آن کھلوتی )

راہداری کھول کر انکی کرپین پہن کر یہودیوں قادیانوں اور سکھوں کے دل تو جیت لیے مگر جس ملک کے اپ ( وزیراعظم ) ہیں وہاں کے سابقہ حکمرانوں اور عوام کا جینا دوبھر کر دیا ہے . نیازی صاحب کل تو اپ کی زبان نہں پھسلی یا نہں اٹکی سر سرایاکال کہتے ہوے مگر حلف برداری کے وقت ( خاتم النبیین ) پر اپکی زبان اٹک گٸی کل اپکے وزرا بھی بار بار رہنے لگواتے رہے اپنے سکھوں اور سدھو کے دل جیت لیے مگر کاش ڈاکٹر آسیہ کی ماں کادل بھی جیت لیتے وہ اپنے بچوں کو ملتی اور اپنے بوڑھے والدین سے ملتی کشمیر کا سودا امریکہ میں کیا تو ایک مظلوم قیدی عورت کو رہا کروا لیتے تاریخ رقم ہو جاتی نیک کام ہر کسی کے نصیب میں کہاں ایسے کاموں کیلیے اللہ نے خاص بندے چنے ہوتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   مزید مساجد ”ہندوتوا“ کے نشانے پر - قادر خان یوسف زئی

کرتارپور کھول کر نہ تو اپکا رتبہ بلند ہوا نہ ہی کوٸی میڈل یا تغمہ ملا . اپ کے دور اقتدار سے پہلے کٸی حکومتیں آٸیں بڑے بڑے جزل آۓ کیا انکو سرمایہ کاری کے گھر نہں آتے تھے (ایک ذرداری سب پہ باری ) نواز شریف کو بھی مودی کا یار کہا گیا . جزل پویز مشرف اپنی خاتوں اول کے ساتھ ہندوستان کی 7 دن سیریں کرتے رہے کسی کو بھی کرتار پور کھولنے کا خیال نہ آیا نہ ہی کسی ہندوستانی حکمران نے کہا رہداری کے بدلے بابری مسجد کا ذکر کرتے وہ سکھوں کو نہ دیتے اپ ذرا دل نہں دہلا جس مسجد یا جگہ پر اللہ اور رسول ﷺ کا کٸی سال ذکر ہوتا رہا وہاں اب بت کدہ بن جاۓ گا کیا واقع اپ پاکستان کے وزیراعظم ہیں ۔

اپنے ملک کے سابقہ حکمرانوں کو نیب کے ساتھ ملکر جیلوں میں ڈالنے کی گیم شروع کی ہے اور عوام کا خون تک چوس لیا ہے اسکے علاوہ کوٸی کام اور بھی کیا ہے اپنے ملک جس پر اپ حکمرانی کر رہے ہیں اسکا اپنے بیڑا غرق کر دیا ہے . ٹیچر سڑکوں پر ڈاکٹر استعفی دینے پر مجبور نابینا افراد سڑکوں پر ہسپتال میں نہ ڈاکٹر نہ دواٸی بے روزگاری مہنگائی اتنی کہ غریب کی پہنچ سے گوشت تو کجا سبزی پہنچ سے باہر ہے بازار مرکیٹیں ویران اور اپ سکھوں اور قادیانیوں کو بغیر ویزہ اور پاسپورٹ کے باڈر کراس کروا رہے ہیں حکمرانی پاکستان پر اور دوستی دشمن سے یعنی ( بغل میں چھری رام رام ) 18 ماہ کے دور اقتدار میں کوٸی کام اپنے اپنی عزت وقار کے اضافے کیلیے کیا ہو یا عوام کو رلیف دیا پاکسان یا عوام کی بہتری کیلیے سوچا کوٸی پلانٹ لگاۓ سکول بنایا تعلیم فری کی یتیم بیوہ کو فنڈ وظیفہ کوٸی قدم بہتری کی طرف اٹھایا ہو تو بتاٸیں اپکو ثاریخ کس نام سے یاد رکھے گی کہیں ظلم کی داستانون میں اپکا نام نہ لکھا جاے آسیہ ملعونہ کو امریکہ کے کہنے پر انکے حوالے کر دیا۔

یہ بھی پڑھیں:   قائداعظم، اسلامی نظام اور ہمارے سیاستدان - میر افسر امان

امریکہ کے کہنے پر کشمیر بیچ دیا اپنے امریکہ سے کیا لیا ڈالر اپنے لیے ڈاکٹر آسیہ کو آزاد کروا لیتے بابری مسجد کو ہی رکوا لیتے . ڈانس اور شراب کو سر عام کیا تاریخ میں پہلی بار رقاصاٸیں پارليمينٹ ہاٶس میں وزیراعظم کی کرسی تک چلی گٸیں کوٸی نوٹس نہں انکوائری نہں ڈانسروں کو تغمہ امتياز سے نوازہ گیا . ہمارا دین قران و حدیث ان کاموں کی سختی سے ممانت کرتاہے مگر اپکو بھلا کیا خبر . نیازی صاحب اپکو تو ( ایاک نعبدو وایاک نستعین ) کے سوا کچھ آتا ہی نہں اپنے 2 مرتبہ عمرہ ادا کیا مگر اپکو یہ معلوم نہں مرد دھیان کندھنا ننگا رکھتاہے کیا معلوم اپنے کعبہ کے طواف کے چکر بھی پورے کیے یا نہں صفا مروہ کیا مقام ابرھیم پر 2 نفل پڑہے یا اللہ جانے . اللہ تعالی نے ارشاد فرمایا ہے کہ میں ظالم کی رسی دراز چھوڑتا ہوں پھر گرفت مضبوط کرتاہوں ۔

ایک مودی ہے جس نے امریکہ کی سفارش کروا کر کشمیر اپ سے لے لیا اور سعودیہ سے ہندوستان میں سرمایہ کاری بھی کروا لی اپ تو کہتے ہوتے تھے میں مر جاونگا بھیک نہں ماونگا مگر وعدہ خلافی کرتے ہوے تو ڈالر ریال لیے کدھر گٸے وہ ڈیم کے نام پر عربوں اکٹھے کیے کدھر گٸے ویسے اپ نادم ہوتے ہونگے کہ میں نے عوام سے کیے وعدے ہوا میں اڑا دیے جو اقتدار میں آکر آرادے وعدے کیے وہ بھی یو ( U ) ٹرن کی نظر ہو گٸے جو رول اپ ادا کر رہے ہیں کیا ملک کا سربراہ ایسے ہی کرتے ہیں ایسا وزیراعظم اپنے پہلے کبھی دیکھا سنا ہے کل ہمیں دیکھ کر شرمندگی ہو رہی تھی کہ ہمارا مسلم ملک کا وزیراعظم سکھوں کے حلیے میں انکے ساتھ زمین پر بیٹھے ہیں۔

آپ کو ذرا جھجک محسوس نہں ہوئی انسان کو اپنے رتبے اور اسٹیٹس کے مطابق کام کرنا چاہیے اپ کو بھی بخوبی معلوم ہوگا کہ اپکو قران و حدیث پر عبور حاصل نہں بلکہ دین سے لگاو ہی نہں نہ ہی پاکسان سے ہمدردی ہے نہ ہی پاکستانی عوام سے اپ نے صرف 22 سال قادیانیوں کیلیے جہدوجہد کی اور اقتدار میں آکر سکھوں کے دل جیت لیے اپکا یہی مشن لیکر اقتدار میں آے جو اپنے پورا کر دیکھایا انکے معاملات میں کوٸی یو ( U ) ٹرن نہں . یہاں کی کھوتی وہیں ان کھلوتی ۔