حکومت اخلاقی قوت سے محروم ہے - عمار خان ناصر

معلوم نہیں، ایسے مشکل وقت میں ایسی باتیں یاد دلانا کتنا درست ہے اور کتنا نہیں، لیکن شاید آدمی کو اپنی غلطیوں کا احساس مشکل وقت میں ہی سب سے زیادہ ہو سکتا ہے۔ تحریک انصاف کو یہ سمجھنا چاہیے کہ اخلاقی طاقت کتنی بڑی چیز ہوتی ہے اور اس کا فقدان کتنی بڑی کمزوری۔

اگر آزادی مارچ معاہدے کو ختم کر کے دار الحکومت کے حساس علاقوں کی طرف بڑھنا شروع کر دے تو حکومت کے پاس صرف طاقت ہے جو وہ استعمال کر سکتی ہے، لیکن ’’اخلاقی طاقت’’ سے وہ بالکل محروم ہے، کیونکہ وہ یہی سب کچھ پانچ سال پہلے خود کر چکی ہے۔ چونکہ اخلاقی قوت موجود نہیں ہے، اس لیے چند محدود اصول پسند اہل دانش اور اہل صحافت کو چھوڑ کر، عوامی سطح پر بھی حکومت کے لیے کوئی ہمدردی موجود نہیں، کیونکہ عوام اسے ’’جیسی کرنی ویسی بھرنی’’ کے اصول پر دیکھ رہے ہیں۔ ایسی صورت میں طاقت کا استعمال حکومت کی پوزیشن کو مزید کمزور کرے گا اور عوامی ہمدردیاں یقینی طور پر، حکومت کے بجائے مارچ کے شرکاء کی طرف بڑھنا شروع ہو جائیں گی۔

اگر آزادی مارچ ساری کشتیاں جلا کر آیا ہے اور مداخلت کی صورت میں اداروں سے بھی direct ہو جانے کا عزم رکھتا ہے، جیسا کہ مولانا کی تازہ تقریر سے بہت واضح ہے، تو ایسی صورت میں اداروں کے لیے بھی حکومت کی مدد کو آنا اتنا آسان نہیں ہوگا جتنا کہ آرمی چیف کی طرف منسوب اس بیان میں فرض کر لیا گیا ہے کہ ’’جانیں ضائع ہونی پڑیں تو ہوں گی۔’’ صورت حال سے پہلے، طاقت کے احساس میں یہ کہنا آسان ہے، لیکن صورت حال کے اندر اس عزم کو پورا کرنا اتنا آسان نہیں ہے، یہ آرمی چیف کو بھی معلوم ہے۔ اور انھیں یہ بھی معلوم ہے کہ آزادی مارچ کو تحریک لبیک کے دھرنے پر قیاس نہیں کیا جا سکتا، اس لیے کہ باقی امتیازات کے علاوہ، اس فرق سے ہی صرف نظر نہیں کیا جا سکتا کہ تحریک لبیک کے دھرنے میں پوری قوم کی اخلاقی ہمدردی حکومت کو حاصل تھی، جبکہ موجودہ صورت میں معاملہ برعکس ہے۔

اس وقت تو دعا ہی کی جا سکتی ہے کہ حکومت اس مشکل صورت حال سے نکلنے کی کوئی تدبیر کر سکے اور خدا نخواستہ، خدا نخواستہ کوئی حادثاتی صورت حال پیدا نہ ہو، لیکن اگر اس وقت تحریک انصاف کی لیڈر شپ دیانت داری سے اپنی ماضی کی غلطیوں کا احساس کر لے گی تو یقینا یہ احساس مستقبل میں اس کے بہت کام آئے گا۔

اللھم احسن عاقبتنا فی الامور کلھا واجرنا من خزی الدنیا وعذاب الآخرۃ، آمین

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com