انقرہ میں یومِ آزادی پاکستان کی تقریب

آج پاکستان، مقبوضہ کشمیر، آزاد کشمیر سمیت دنیا بھر کی طرح ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں بھی میں جشن آزادی اور اظہار یکجہتی کشمیر جوش و جذبہ کے ساتھ منایا گیا۔ سفارت خانہ پاکستان میں ہونے والی تقریب میں بڑی تعداد میں ترکی میں مقیم پاکستانی شہریوں جن میں ترکی کی مختلف یونیورسٹیوں میں زیر تعلیم طلبہ بھی شامل ہیں، کے علاوہ پاکستانی سفارت کاروں اور ترک باشندوں نے بھی شرکت کی۔

تقریب کا آغاز تلاوتِ کلام پاک سے ہوا۔ اس کے بعد انقرہ میں پاکستان کے سفیر محمد سائرس سجاد قاضی نے پرچم کشائی کی۔ اس موقع پر سفارتخانہ پاکستان کے چارج ڈی افئیر اسد گیلانی نے صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی اور وزیراعظم پاکستان عمران خان کے قوم کے نام پیغامات بھی پڑھ کر سنائے۔

اس موقع پر سفیر محمد سائرس سجاد قاضی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہاں سفیر پاکستان ہونے کے ناتے میری پہلی ذمہ داری دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کو مزید فروغ دینا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ترکی میں آباد پاکستانی شہری اور طلبہ دونوں ممالک کے درمیان ایک پل کا کردار ادا کر رہے ہیں۔ انھوں نے اس موقع پر ترکی کے کشمیر کے موضوع پر پاکستان کی مکمل حمایت کرنے پر حکومتِ ترکی اور ترک عوام کا شکریہ ادا کیا۔

پاکستانی سفیر نے مقبوضہ کشمیر پر بھارتی جارحیت اور کشمیریوں پر ہونے والے ظلم و ستم پر بھی روشنی ڈالی اور کہا کہ اس بار چودہ اگست کشمیری عوام کے ساتھ یوم یکجتی کے طور پر بھی منایا جا رہا ہے۔ انہوں نے کل شام سفارتخانہ پاکستان میں یوم سیاہ کے موقع پر پہلے قرآن خوانی اور بعد میں کشیر کے شہداء کی یاد میں موم بتیوں کو روشن کرنے سے بھی آگاہ کیا۔

سفیر پاکستان محمد سائرس سجاد قاضی کے خطاب کے بعد پاکستان انٹر نیشنل اسکول کے بچوں نے پاکستان کے قومی ترانے پیش کیے جنہیں بے حد پسند کیا گیا۔