ترکی کو F-35 طیاروں کی فروخت رکوانے میں اسرائیل کا ہاتھ ہے

انکشاف ہوا ہے کہ اسرائیل نے خطے میں بالادستی قائم رکھنے کی خاطر ترکی کو ایف-35 جنگی طیاروں کی فروخت رکوانے کےلیے امریکہ سے گٹھ جوڑ کیا ہے۔

اسرائیلی ٹی وی چینل 12 کی خبر کے مطابق، اسرائیل نے صدر رجب طیب ایرودان کی جانب سے ایس 400- میزائل روس سے خریدنے کے اعلان کو موقع غنیمت سمجھتے ہوئے امریکہ پر F-35 طیاروں کی فروخت رکوانے کےلیے دباؤ ڈالا ہے۔

واضح رہے کہ اسرائیل خطے کا وہ واحد ملک ہے جس نے دو سالہ عرصے میں 16 عدد F-35 طیارے حاصل کر رکھے ہیں۔ دریں اثنا صہیونی حکومت نے امریکہ کے امدادی فنڈز کا استعمال کرتےہوئے 50 عدد F-35 طیاروں کی خرید کےلیے امریکی کمپنی لاک پیڈ مارٹن سے معاہدہ طے کر رکھا ہے جن کی وصولی سن 2024 تک متوقع ہے۔