کینیڈا میں ٹیکس چوری کیوں نہیں؟ زبیر منصوری

کینیڈا میں تقریبا" 40 فیصد تک کمائی ٹیکس میں چلی جاتی ہے اور کوئی ٹیکس چوری نہیں کرتا... کیوں؟
.
مسلسل شدید برف باری ہو رہی ہے, دو دن سے لوگ گھروں میں قید ہیں, میرے ایک دوست کی دو سالہ سانس کی مریض بیٹی کی حالت بگڑ رہی ہے.. وہ نیلی پڑ رہی ہے اور باہر چار چار فٹ برف پڑی ہے جس کی وجہ سے کہیں باہر نکلنا ممکن نظر نہیں آ رہا...... دوست کی بیوی پریشان ہو کر آخر ریسکیو کو کال کرتی ہے....5 منٹ کے اندر ڈور بیل ہوتی ہے اور ریسکیو ٹیم گھر پہنچ جاتی ہے وہ فورا" وہیں بچی کو آکسیجن لگا دیتے ہیں, کچھ انجیکشنز لگاتے اور ادویات فراہم کرتے ہیں.
... بتدریج بچی کا نیلا رنگ کم ہوتے ہوتے زندگی سے بھرپور پنک ہو جاتا ہے.. ریسکیو ٹیم "تھینکس فار کالنگ اس" کہہ کر واپس روانہ ہو جاتی ہے.......
ایسی حکومت کو تو میں اپنی کمائی کا ستر فیصد بھی دے دوں!!! اور احسان بھی مانوں.
ہمارے ٹیکس سے حکومت پاکستان کی حدود میں عورتیں اسپتال کے کوریڈور میں بچے لےکر بیٹھی رو رہی ہوتی ہیں... سرکاری اسپتالوں اور محکموں میں فرعون تعینات کر دیے جاتے ہیں, کچرا سڑکوں کو بند کر دیتا ہے, پانی پی کر یرقان ہو جاتا ہے, ملاوٹ کرنے والے کھلے گھومتے ہیں, نشیئ فٹ پاتھوں پر مر جاتے ہیں, حادثات میں خیراتی اداروں کی ایمبولینس ہی آتی ہیں.
میرا ٹیکس تو ملک میں رہنے کا بھتہ محسوس ہوتا ہے اور ٹیکس اداروں کے پاس رجسٹرڈ آدمی ان کے نزدیک چور ہوتا ہے.

مگر ہم کو ملک چلانا ہے ٹیکس ضرور دینا ہے ہر جگہ ہر موقعہ پر......
یہ بچی کینڈا میں پیدا ہونے کی وجہ سے کینیڈین نیشنل ہے, اس کا باپ اسے ایک مرتبہ پاکستان لایا... پاکستان میں ائرپورٹ سے نکلا ہی تھا کہ اسے کینیڈا سے ایک سرکاری کال موصول ہوئی...
"آپ ایک کینیڈین بچی کو ملک سے باہر لے گئے ہیں جس کی میڈیکل کنڈیشن ہمارے ریکارڈ کے مطابق انتہائی نگہداشت کی متقاضی ہے, اگر ہماری شہری کو کسی قسم کا نقصان پہنچا تو اس کی قانونی ذمہ داری آپ پر عائد ہو گی اور ہم قانون کو استعمال کرنا جانتے ہیں" اس کے باپ نے کہا کہ وہ اس کا باپ ہے, اس سے ذیادہ کون خیال رکھے گا اس کا,
....... "یہ ہم نہیں جانتے" فون کے دوسری جانب سے کہا جاتا ہے, "لیکن اس کی حفاظت آپ کو کرنی ہے اور ہر صورت بحفاظت اس کے وطن (کینیڈا) واپس لانا ہے".
یہ سچا واقعہ ہے...
یہ حکومت اپنے ایک ایک شہری کی خبر رکھتی ہے...... کاش کہ پاکستان میں بھی ایسا ہو جائے
منقول....
اب یہ کوئی نہ کہے کے پہلے والے ایسے تھے آپ نے ایک سال میں کونسا چھوٹا سا ریلیف بھی دیا ہے جس کے بدلے آپ پر بھروسہ کریں کہ یہ آئندہ اور دین گے اور عوام بخوشی ٹیکس دیں؟

Comments

زبیر منصوری

زبیر منصوری

زبیر منصوری نے جامعہ منصورہ سندھ سے علم دین اور جامعہ کراچی سے جرنلزم، اور پبلک ایڈمنسٹریشن کی تعلیم حاصل کی، دو دہائیاں پہلے "قلم قبیلہ" کے ساتھ وابستہ ہوئے۔ ٹرینر اور استاد بھی ہیں. امید محبت بانٹنا، خواب بننا اوربیچنا ان کا مشغلہ ہے۔ اب تک ڈیڑھ لاکھ نوجوانوں کو ورکشاپس کروا چکے ہیں۔

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.