خان صاحب قدم بڑھائیں ہم آپ کے ساتھ ہیں - صہیب جمال

ہمارے ایک دوست بہت ہی پیارے احمد سیال اپنے ایک جاننے والے کو چھڑانے تھانے بات چیت کے لیے گئے، جس جگہ اس کو رکھا گیا وہاں پندرہ منٹ کھڑے ہوئے تو ان کا تیل نکل گیا، کہنے لگے اگر زرداری ، نواز شریف ، حمزہ شہباز اور دوسرے عناصر کو صرف ایک دن ایسی قید دے دی جائے تو وہ ساری لوٹی دولت واپس کردیں کیونکہ ان کا لائف اسٹائل اس سے قدرے مختلف ہے۔ ان سے پیسے لیں اور ان کو واپس ان کی ایلیٹ زندگی میں جانے دیں، کیونکہ عوام پر جو پچھلوں کا بوجھ ڈالا گیا ہے یہ دو ڈھائی سال میں بھی نہیں اترے گا۔

خان صاحب یہ سمجھ لیں یہ ان کا آخری اوور ہے اور بہت رنز چاہییں، کریز سے باہر نکل نکل کر چھکے ماریں، سب کے کرپٹ پکڑ لیں، ان کو اپنے کرپٹ بھی پکڑنے ہیں، اپنے اردگرد لوگوں جہانگیر ترین، اعظم سواتی، علیم خان، زلفی بخاری سے بھی پیسے نکلوانے ہیں، ایک ظالم ٹیل اینڈر بن جائیں، اب پھر ان کو بیٹنگ نہیں ملنی ہے، صرف سو سرکاری افسران سے ان کی تنخواہ سے زائد اثاثوں کا حساب مانگ لیں اور رقم پکڑ لیں، خان صاحب آفریدی کی طرح راتوں رات ہیرو بن جائیں گے، عوام پر جو بوجھ ہے وہ ختم ہو جائے گا۔ سوئس بینک نے اپنی پچھلی رپورٹ میں پاکستانیوں کے نوّے ارب ڈالر ظاہر کیے تھے ، جس میں سے صرف ساٹھ ارب ڈالر پڑے ہیں، یعنی تیس ارب ڈالر ابھی بھی ادھر ادھر کیے گئے ہیں ، کہیں بقایا رقم بھی نہ چلی جائے، ساٹھ ارب بھی بہت ہیں ملک پٹری پر نکل پڑے گا۔

یہ رقم ہماری ہے اس کو نکلوائیں، خان صاحب نے اپنی زندگی میں سب کچھ دیکھا ہے پیسہ ، لڑکیاں ، ملکوں ملکوں دورے ، ہائی کلاس پارٹیاں ، گاڑیاں ، جہاز ، ہیلی کاپٹر ، کیا ہوا اگر لینڈ کروزر سے جی ایل آئی پر آ جائیں گے ، کچھ نہیں ہوتا اگر جہانگیر ترین ناراض ہوگیا تو ، کچھ نہیں ہوتا ساری سیاسی پارٹیوں کے کارکنان اپنی جگہ سے ہلیں گے بھی نہیں ، کریں اسٹیبلشمنٹ سے بات اور سنا دیں اپنا فیصلہ اور کہہ دیں میں اب سکسر مارنے لگا ہوں جہاں میرا اتنا ساتھ دیا اور ساتھ دیں۔ خان صاحب ! بن جائیں ہیرو گارنٹی دیتا ہوں آپ کے مخالفین بھی آپ کے ہمنوا ہو جائیں گے ، ہمت کریں یہ اسٹیبلشمنٹ کی مصلحت پسندی کو بدل ڈالیں۔ عوام پر بوجھ بڑھ چکا ہے واقعی لوگ پریشان ہیں ، عوام سے پچھلوں کا بدلہ نہ لیں ، پچھلوں سے دولت واپس لیں ہر چھوٹے بڑے کرپٹ سے رقم واپس لیں ۔ ٹیکس بھی خود جمع ہونے لگیں گے۔