تسکین - اے وسیم خٹک

دونوں ایک جان دوقالب تھے۔ یونیورسٹی میں ہمیشہ ساتھ ہی رہتے تھے۔ کلاس فیلو دونوں پر رشک کرتے تھے۔ عائشہ خوبصورت تھی تو اعجاز بھی وجاہت میں کم نہیں تھا۔ فرق تھا تو دونوں کے خاندانوں میں تھا اور وہ زمین آسمان کا فرق!

عائشہ امیر تھی تو اعجاز ایک لکڑہارے کا بیٹا تھاـ مگر محبت یہ نہیں دیکھتی کہ کون غریب اور کون امیر ہے۔ دونوں نے ایفائے محبت کے وعدے کیے۔ امیری غریبی کو محبت پر حاوی نہیں ہونے دیا۔ وقت گزرتا رہا۔ دونوں اب شادی کے بندھن میں بندھنا چاہتے تھے اور پھر رشتے کی بات چلی تو اعجاز کو بےعزت کرکے گھر سے نکال دیا گیا۔

عائشہ نے بغاوت کی، باپ کے سامنے زبان چلادی، مگر کوئی اثر نہیں ہوا۔ عائشہ کی شادی کر دی گئی۔ اعجاز کی ماں کا انتقال ہوا، گھر میں کوئی خاتون نہیں تھی، تو اعجاز نے بھی شادی کر لی۔

وقت پر لگا کر اُڑتا رہا، سالوں گزر گئے۔ ایک دن عائشہ کو پتہ چلا کہ اس کے بیٹے کو اس کی ہم نام عائشہ سے محبت ہوگئی ہے۔ معلوم کر نے پر پتہ چلا کہ وہ اس کی ادھوری محبت اعجاز کی بیٹی ہے۔ اور پھر عائشہ اور اعجاز ملے۔ دونوں نے اپنے بچوں کے نام اپنی محبتوں کے نام پر رکھے تھے۔ دونوں نے باہم مل کر فیصلہ کیا اور پھر اپنے بچوں کی ایک دوسرے سے شادی کر کے اپنے پرانے جذبے کی تسکین کر دی۔