خواتین مایوسی سے نجات کیسے حاصل کریں - مؤمنہ گل

ایسی کیفیت جو اچھی بھلی ذندگی کو دیمک کی طرح چاٹ جاتی ہے۔ خواتین اگر مایوسی اور ڈپریشن جیسے موضی امراض سے خود کو بچانا چاہتی ہیں تو لازم ہے کہ خوش رہیں اور اپنی زندگی میں نئی مثبت اور دل پسند سرگرمیوں کا اضافہ کریں۔ کوئی بھی کام چاہے کتنا ہی اہم کیوں نہ ہو، انسان کی فطرت ہے بار بار کرنے سےآخرکار اس سے اُکتا جاتا ہے۔

گھر داری تو عورت کی فطرت میں شامل ہے اور یہ کام ساری زندگی کرنے کے ہیں لیکن اس کے ساتھ ساتھ اپنی ذہنی خوشی اور اطمینان کے لیے کم ازکم ایک وقت میں ایک اپنی دلچسپی والا مشغلہ ضرور ساتھ رکھیں۔ مثلاً اپنے گھر میں پھول سبزیاں اگائیں، وافر جگہ نہ ہو تو گملوں میں آسانی سے اگا کر شوق کی تسکین کی جاسکتی ہے، ان کو ہرا بھرا دیکھ کر یقیناً خود خواتین کھل اٹھیں گی۔ روزانہ کچھ وقت اپنے ذوق کے مطابق مختلف کتابیں اور رسائل واخبار پڑھنے کا وقت ضرور نکالیں۔ اس سے نہ صرف حالاتِ حاضرہ کی خبر رہے گی بلکہ ذہن و روح میں بھی وسعت پیدا ہوگی۔ گھر میں کوئی پالتو جانور یا پرندے جیسے مینا، توتا یا فاختہ رکھ لیں۔ گھر والوں کے ساتھ چھوٹی موٹی تفریح کا سامان کر لیں۔ کہیں باہر نہیں جا سکتیں تو اہلِ خانہ کی پسند کی چیزیں بنا کر گھر میں ہی ارینج کر لیں۔

اور ہاں! خود کو تنہائی سے ضرور بچائیں، اپنے رشتہ داروں کے لیے ضرور کچھ وقت نکالیں ورنہ دنیا سے کٹ کے رہ جائیں گے۔ واک اور ہلکی پھلکی ورزش کو لازمی اپنی زندگی کا حصہ بنائیں کیونکہ اس سے مزاج پر خوشگوار اثرات مرتب ہوتے ہیں۔ دعا اور مراقبہ کے ذریعے ﷲ سے اپنا تعلق مضبوط بنائیں۔ یاد رکھیں کہ کوئی بھی مسئلہ یا پریشانی رب کے آگے بڑی نہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   ہم اور سٹریس - بشری نواز

آپ مکمل طور پر گھریلو خاتون ہیں یا جاب کرتی ہیں، دونوں صورتوں میں یہ سرگرمیاں زندگی کی یکسانیت سے بچاتی ہیں۔ سب سے اہم بات یہ ہے کہ اگر آپ خوش ہیں تو اس صورت ہی آپ حقوق العباد اور حقوق اﷲ پورے کر سکتی ہیں۔ اپنی زندگی کو خوبصورت بنائیں اور اپنے اردگرد رہنے والوں کو خوشی دے کر ان کو اپنا بنالیں۔