عمران کی پیرنی عمران کی شادی - اسری غوری

عمران کی پیرنی
عمران کی شادی
عمران کی سابقہ بیویاں
عمران کے معاشقے
عمران کی بیٹی
عمران نے پھر شادی کر لی
عمران نے پرپوز کیا شادی نہیں کی
وہ عورت مطلقہ ہے
وہ پانچ بچوں کی ماں ہے
اس کی اخلاقی حیثیت کیا ہے
یہ ہے گزشتہ چار پانچ دن کی نیوز فیڈ کے موضوعات۔

حیراں ہوں دل کو روؤں کہ پیٹوں جگر کو میں

بخدا فیس بک نیوز فیڈ دیکھ کر احساس ہوتا ہے جیسے میں بغداد کے چوک چوراہوں گلی کوچوں میں ہوں، جہاں اک جانب ہلاکو خان کے پوری بربریت کے ساتھ حملہ آور ہونے کی اطلاعات بھی پہنچ چکی ہیں، مگر دوسری جانب مجالس میں یہ بحث جاری ہے کہ "کوا حلال ہے یا حرام"
بڑے زور و شور سے مناظرے کیے جا رہے تھے
ہلاکو خاں سروں پر پہنچ چکا تھا
اور پھر وقت نے یہ دیکھا کہ مسلمان علماء و مناظرین اپنے مناظروں میں اس سوال کا جواب تلاش بھی نہ کر پائے تھے کہ تاتاری حملہ آور سپاہیوں نے بغداد کی اینٹ سے اینٹ بجا دی۔ عظیم مسلم سلطنت کی عظمت اپنے گھوڑوں کی ٹاپوں تلے روند ڈالی اور مسلمانوں کے سروں کے مینار بنا کر اپنی فتح کا جشن منانے لگے۔

ہلاکو خان کی سپاہ کی تیز دھار تلواروں نے مسلمانوں کے سر ان کی گردنوں سے اتارتے ہوئے کسی سے یہ نہیں پوچھا کہ کس گردن پر سجا کون سا سر کوے کو حرام اور کون سا حلال سمجھتا ہے؟

آج اک طرف پوری امت مسلمہ شام سے برما تک کشمیر سے فلسطین تک ایسے ہی وقت کے تاتاریوں کے ہاتھوں لہولہان ہے اور دشمن قبلہ اول کو ڈھا دینے کے منصوبے پر اپنے ناپاک عزائم پر تیزی سے عمل پیرا ہے، جبکہ ہم آج بھی ہر دوسرے دن میڈیا کے لگائے ہوئے نئے نئے تماشوں میں آنکھیں بند کیے کود جاتے ہیں، اور ڈگڈگی پر ناچنے لگتے ہیں۔
افسوس اس وقت ہوتا ہے جب ان بحثوں اور فضولیات میں بےدین لوگ ہی نہیں بلکہ دین کے دعویدار بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے دکھائی دیتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   کوزے میں سمندر اور نامعلوم بیماری - ارشدعلی خان

ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ آپ لوگوں کو اس وقت آنے والے خطرات سے آگاہ کرتے، ٹرینڈ سیٹر بنتے، لوگوں کو سوچنے اور بحث کرنے کے لیے درست سمت دکھاتے، نہ کہ اس بھیڑ چال کی نظر ہو جاتے. آپ بھی زمانے کے رنگ میں اپنا رنگ کھو دینے کو تیار ہوگئے او اس کا ادراک تک نہیں۔ کیا آپ کی سمت، مشن اور مقصد ایسا ہی کمزور ہے کہ جب جو چاہے آپ کو لغویات میں لگا کر بھٹکا دے؟

سوچیے تو سہی!
کیا امت مسلمہ کے مسائل ختم ہوچکے ہیں یا ہم اتنے فارغ ہو چکے ہیں کہ اب عمران کی شادی اور اک عورت کے پانچ بچوں کی ماں ہونے یا اس کے طلاق یافتہ ہونے پر اس کی اخلاقی حیثیت جیسے موضوعات پر بحثوں اور مناظروں سے اپنی دیواروں کو سجائیں۔

خدارا!
تاریخ سے سبق سیکھیے کہ جب دشمن سر پر کھڑا ہو تو موضوع اور بحثیں دشمن کو شکست دینے کی پلاننگ کی ہوں تو ہی دشمن کو شکست دی جاسکتی ہے، وگرنہ دوسری صورت میں سبق نہ سیکھنے والی بے خبر قومیں تاریخ میں کہیں گھوڑوں کی ٹاپوں تلے روندتی دکھائی دیتی ہیں تو کہیں پوری پوری بستیاں ڈرون سے اڑا دی جاتی ہیں، اور تاریخ میں پھر وہ عبرت کے نشان کے طور پر ہی یاد کی جاتی ہیں۔

سنبھلیے!
اس سے پہلے کہ آپ بھی آنے والی قوموں کے لیے عبرت بنادیے جائیں۔

Comments

اسری غوری

اسری غوری

اسری غوری معروف بلاگر اور سوشل میڈیا ایکٹوسٹ ہیں، نوک قلم بلاگ کی مدیرہ ہیں، حرمین کی زیارت ترجیح اول ہے، اسلام اور مسلمانوں کا درد رکھتی ہیں اور اپنی تحاریر کے ذریعے ترجمانی کرتی ہیں

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.