دلیل کی مقبولیت میں خواتین لکھاریوں کا کردار - سعدیہ نعمان

علامہ اقبال نے کہا تھا
دلیل صبح روشن ہے ستاروں کی تنک تابی
افق سے آفتاب ابھرا گیا دور گراں خوابی

دلیل کی آمد بھی گویا صبح روشن کی نوید بنی، ایک بھر پور اور کارآمد سال گزارنے پہ دلیل کی پوری ٹیم، لکھاریوں اور قارئین کو دلی مبارکباد.

اس پورے سال میں جہاں بہت سے نامور صحافی اور کالم نگار اپنے دلائل کے ساتھ دلیل کے صفحات پہ نظر آئے، وہیں خواتین لکھاریوں کی ایک کھیپ موجود رہی جو دلیل کو مسلسل توانائی بخشنے کے ساتھ ساتھ معاشرے کی اصلاح اور عوامی رویوں اور سوچ کو درست رخ پہ ڈالنے میں بے حد ممد و معاون ثابت ہوئی. ان حساس خواتین لکھاریوں کی تحریروں کو جہاں بے حد پذیرائی ملی، وہیں قاری کے کردار کی تعمیر اور معاشرتی رویوں میں توازن پیدا کرنے کی تحریک بھی ملی.

آج میں ان خواتین کو خراج تحسین پیش کروں گی جو اپنی بے پناہ گھریلواور دیگر مصروفیات نیز عملی مشکلات کے باوجود قلم کے جہاد میں سرگرم رہیں اور بدلہ میں انہیں کسی صلہ اور ستائش کی تمنا نہ تھی.
ان لکھاری اور مصنف خواتین میں نمایاں نام
افشاں نوید
ڈاکٹر رابعہ خرم درانی
اسری غوری
نورین تبسم
فرح رضوان
نیر تاباں
حنا نرجس
جویریہ سعید
تزئین حسن
حنا تحسین طالب
فارینہ الماس
سائرہ ممتاز
حیا حریم
ثمینہ رشید
حمیرا خاتون
عائشہ غازی
معلمہ ریاضی
نصرت یوسف
راحیلہ ساجد
سحر فاروق
ساجدہ فرحین
نسرین غوری
صائمہ اسما
ام الہدی
حفصہ عبدالغفار
مدیحی عدن
نازش اسلام
تنزیلہ یوسف
زینی سحر
شامل ہیں
ممکن ہے کچھ مزید نام بھی ہوں.

درج بالا
خواتین میں سے کچھ نے معاشرے کی اصلاح کا بیڑا اٹھایا (فرح رضوان) تو کچھ نے نہایت اعلی تخلیقی اور تحقیقی مضامین تحریر کیے (تزئین حسن)، کچھ نے ہلکے پھیلے انداز میں معاشرے کے ناسوروں پہ قلم اٹھایا (ڈاکٹر رابعہ خرم) اور کچھ نے کہانی کے ذریعے عمدہ انداز سے بچوں اور بڑوں کے لیے سوچ کے کئی در کھولے (حنا نرجس)
بلاشبہ یہ سب مبارکباد کی مستحق ہیں اور ان کے بغیر دلیل کا سفر ادھورا ہے.

یہ بھی پڑھیں:   پیارے نبیﷺ کی سالگرہ - جویریہ یوسف

امید ہے آئندہ بھی دلیل کا ادارہ صبح روشن کی نوید بنے گا اور معاشرے میں ظلمتوں کو مٹانے اور اجالوں کو بکھیرنے میں اپنا مثبت کردار ادا کرتا رہے گا.

آخر میں ایک بار پھر ادارہ کے سب افراد کو مبارکباد اور یہ شعر آپ سب کی نذر
زد پہ طوفاں کی کاغذ کا نگر رکھتے ہیں
لاکھ سیلاب و حوادث ہوں مگر رکھتے ہیں
اس کے باوصف کہ ہر سمت اندھیرا ہے محیط
ہم ہیں وہ لوگ جو امید سحر رکھتے ہیں

Comments

سعدیہ نعمان

سعدیہ نعمان

سعدیہ نعمان سعودی عرب میں مقیم ہیں، بہاؤالدین زکریا یونیورسٹی ملتان سے ابلاغ عامہ میں ماسٹر کیا، طالبات کے نمائندہ رسالہ ماہنامہ پکار ملت کی سابقہ مدیرہ اور ایک پاکیزہ معاشرے کے قیام کے لیے کوشاں خواتین کی ملک گیر اصلاحی و ادبی انجمن حریم ادب کی ممبر ہیں

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.