طواف کرنے والوں کے لیے اک نئی سہولت

حرمین شریفین کی آفیشل ویب سائٹ کے مطابق گزشتہ ہفتے ایک اعلی سطحی اجلاس امیر مکہ مکرمہ کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں‌ ماہ رمضان میں‌ ضیوف الرحمن کی خدمت کے لیے تیاری کا جائزہ لیا گیا اور کئی اہم فیصلے بھی کیے گئے.

تفصیلات کے مطابق مسجد الحرام میں مطاف کے اندر نماز کی ادائیگی کے لیے پابندی لگا دی گئی ہے، یہ پابندی ماہ رمضان کے آخر تک جاری رہے گی، اس کے لیے اب مطاف میں صرف طواف کرنے والے افراد ہی داخل ہو سکیں گے، جبکہ فرض‌ نمازوں‌ اور تراویح کی ادائیگی کے لیے مسجد الحرام کے نئے توسیعی حصوں‌اور مطاف کے علاوہ دیگر جگہوں کو استعمال کیا جائے گا.

انتظامی امور کی کمیٹی کے مطابق اس اقدام کے لیے قرآن مجید سے رہنمائی لی گئی ہے؛ کیونکہ اللہ تعالی نے سورہ حج آیت 26 میں مسجد الحرام کی صفائی ستھرائی سے مستفید ہونے والوں میں سب سے پہلے طواف کرنے والوں کو ذکر کیا اور ان کے بعد نماز ادا کرنے والوں کا ذکر فرمایا، اس لیے مطاف میں طواف کرنے والوں کو دیگر عبادات گزاروں سے ترجیح دی گئی.

واضح رہے کہ مطاف میں فرض نمازوں کی ادائیگی وہی لوگ کر سکیں گے جو مطاف میں طواف کر رہے ہوں گے، دیگر لوگوں کو مطاف میں آ کر نماز ادا کرنے کی اجازت نہیں‌ ہوگی اور اس کے لیے مطابق میں قالین بھی نہیں‌ بچھائے جائیں گے. اسی طرح اذان کے بعد کعبہ شریف کے ساتھ نماز کے لیے جگہ روکنے پر بھی پابندی ہوگی، یعنی کعبہ شریف کے ساتھ اسی وقت نماز کے لیے صف بندی کی جائے گی جب نماز کے لیے اقامت کہی جائے گی.

دوسری جانب مسجد الحرام میں عمرے کی نیت سے جانے والوں نے اس اقدام پر خوشی کا اظہار کیا اور کہا کہ اس طرح سے عمرے کی ادائیگی میں مزید آسانی ہوگی اور عمرے کے لیے طواف کا مرحلہ جلد اور آسانی سے مکمل ہو جائے گا.

ماخذ: خبر کی دلیل

Comments

شفقت الرحمن مغل

شفقت الرحمن مغل

شفقت الرحمن جامعہ اسلامیہ مدینہ منورہ سے بی ایس حدیث کے بعد ایم ایس تفسیر مکمل کر چکے ہیں اور مسجد نبوی ﷺ کے خطبات کا ترجمہ اردو دان طبقے تک پہنچانا ان کا مشن ہے. ان کے توسط سے دلیل کے قارئین ہر خطبہ جمعہ کا ترجمہ دلیل پر پڑھتے ہیں۔

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com