رمضان کو فیسٹیول بنانے سے روکنا ہے تو - زبیر منصوری

ٹی وی چینلز کو ”رمضان کریم“ کو ”رمضان فیسٹیول“ بنانے سے روکنا ہے تو
آج سے کام کا آغاز کریں

1) ان کی لائف لائن اشتہارات پر ضرب لگانے کو پلان کریں.

2) انگلش میں اچھے سلوگنز اور آرگیومنٹس کے ساتھ اشتہاری کمپنیوں اور ایڈ دینے والی کمپنیوں کے مار کیٹننگ ہیڈ ز سے ملیں اور ان کو نصیحت کرنے کے بجائے صاف کہیں کہ یہ ہمارے کلچر اور ملکی آئین کے خلاف ہے. اگر آپ ان پروگرامات کو ایڈ دیں گے تو ہم آپ کے خلاف بائیکاٹ اور پروٹیسٹ کی کمپین چلائیں گے.

3) میڈیا ہاؤسز کے مالکان سے ملیں اور ان کو بتائیں کہ یہ اینکرز اور یہ پروگرامز پیمرا رولز، معاشرتی روایات اور رمضان المبارک کے تقدس کے خلاف ہیں. ہم پیمرا اور عدالت جائیں گے، ممکن ہو تو کچھ وکلا عدالت چلے بھی جائیں.

4) ان کو کلئیر ڈیڈ لائن دیں، ان کے پیجز پر کمنٹس اور پوسٹس کریں. کوشش کریں کہ ان کی ریٹنگ گرائی جائے.

5) دشمن کا دشمن دوست کے اصول کے تحت چینل مالکان کی باہمی مخالفتوں کو استعمال کریں.

6) یہ کام اچھی گفتگو کر لینے والے سمجھدار لوگ، وکیل، ڈاکٹرز، پڑھی لکھی عام سوسائٹی کی خواتین کر سکتی ہیں.

7) کوشش کریں کہ یہ ساری ایکٹیوٹی لیبلڈ نہ ہو جائے.

8)کری ایٹو لوگ اس کے خلاف نئے سلوگنز اور آئیڈیاز بنائیں.

9) ایسے اینکرز کو مسخرے اور بھانڈ کے طور پر پیش کیا جائے. ان کے کارٹون بنائے جائیں، جو لوگ دین کو مذاق بنا رہے ہیں، ان کا مذاق بننا چاہیے.

10) یہ کام سمجھدار اور اچھا بولنے والے لوگ سنجیدگی سے کریں، عارضی، وقتی، جذباتی لوگ خود سے کریں گے تو بات خراب ہی نہ کر دیں۔

11) چینلز پر رمضان کے پروگرامات میں جانے والے علماء سےگروپس میں ملیں اور بصد احترام عرض کریں کہ آپ کا مجموعی وزن رمضانی شیطانوں کے حق میں پڑ رہا ہے۔

12) لائیو کال کر کے اچھے لفظوں میں احتجاج کریں.

13) چند بڑے لغو گو اینکرز کے گھروں کے راستے میں ان کے پروگرام کے خلاف چاکنگ کریں.

14) کچھ لوگ ان کے والدین یا بہن بھائیوں کو شرم دلا سکیں تو دلائیں (ویسے شرم کہاں، وہ کہاں)

15) ان شوز کے خلاف پوسٹرز ڈیزائننگ کا مقابلہ کرائیں.

16) اسکولز مالکان اپنے بچوں کو خطوط دیں کہ وہ اپنے محلے کی دس آنٹیوں سے مل کر ان کے بائیکاٹ کی درخواست کریں.

17) چند افراد دو دو کے گروپ میں پلے کارڈز کے ساتھ پریس کلب پر مظاہرہ کریں.

18) کچھ با ہمت لوگ کسی تقریب میں اینکرز کو سر عام ان کی فضول گفتگو پر متوجہ کریں.

19) اپنی پوری فون ڈائریکٹری، فیس بک، واٹس ایپ ممبرز کو ان کا بائیکاٹ کرنے کا کہیں اور وعدہ لیں، رمضان بھر بار بار ایسا کریں.

20) ٹوئٹر ٹرینڈز بنائیں.

21) تحریک انصاف، مسلم لیگ، جماعت اسلامی کی سوشل میڈیا ٹیمیں اور فیس بک کے بڑے پیجز کے ایڈمنز کامن گول پر اکٹھے ہوں.
22) ان کے توہین آمیز جملوں کو شئیر کریں تاکہ عوامی رائے ان کے خلاف بن سکے.

دنیا بھر میں پریشرز گروپس ہیں جو میڈیا کو اوقات میں رکھتے ہیں ورنہ مغرب کی کوکھ سے جنم لینے والا یہ جن سب الٹ پھیر کر دیتا ہے. اخلاق، قانون اور اصولوں کے دائرے میں رہ کر ان کو لگام دی جا سکتی ہے، بس کچھ لوگ ایک چھوٹے سے آغاز کا یکسوئی اور مستقل مزاجی سے فیصلہ کر لیں۔

Comments

زبیر منصوری

زبیر منصوری

زبیر منصوری نے جامعہ منصورہ سندھ سے علم دین اور جامعہ کراچی سے جرنلزم، اور پبلک ایڈمنسٹریشن کی تعلیم حاصل کی، دو دہائیاں پہلے "قلم قبیلہ" کے ساتھ وابستہ ہوئے۔ ٹرینر اور استاد بھی ہیں. امید محبت بانٹنا، خواب بننا اوربیچنا ان کا مشغلہ ہے۔ اب تک ڈیڑھ لاکھ نوجوانوں کو ورکشاپس کروا چکے ہیں۔

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں