دور اندیشی - خواجہ مظہر صدیقی

حاجی صاحب ایک دور اندیش آدمی ہیں. وہ ایک بڑی اور کامیاب کاروباری شخصیت بھی ہیں. ہر مجلس اور محفل کی جان ہوتے ہیں. کئی خوبیوں کے مالک ہیں. ان کی خاص بات ہے، ان کا مشورہ...
’’حاجی صاحب!... جوڑوں میں درد ہے...‘‘
’’فارمی مرغی کا گوشت مت کھاؤ..‘‘
’’بلڈ پریشر تیز رہتا ہے.‘‘
’’فارمی مرغی کا گوشت مت کھاؤ..‘‘
’’بچے وقت سے پہلے بڑے ہو رہے ہیں.‘‘
’’اس کی وجہ فارمی مرغی کا گوشت ہے.‘‘
’’عمر میں برکت ہی نہیں رہی...انسان کھڑے کھڑے گرتا ہے اور مر جاتا ہے..‘‘
’’اس کی وجہ فارمی مرغی کا گوشت ہے..‘‘

حاجی صاحب فارمی مرغی کا گوشت کھانا پسند نہیں کرتے تھے، بلکہ فارمی مرغی کے گوشت کی مخالفت میں طویل تقریر کرنے اور دلائل دینے سے بھی گریز نہیں کرتے تھے.
چند روز پہلے حاجی صاحب نے اپنے بیٹے کی شادی کے دعوت نامے تقسیم کیے تھے. تمام احباب امید لگائے بیٹھے تھے کہ حاجی صاحب دعوت ولیمہ میں فارمی مرغی کا گوشت قریب بھی پھٹکنے نہیں دیں گے. سب کا یہی گمان تھا کہ بکرے کے گوشت یا پھر کٹے کے گوشت کی ڈشیں تیار ہوں گی.

گذشتہ شب حاجی صاحب کے صاحبزادے کا ولیمہ تھا. جس میں مہمانوں کی تواضع فارمی مرغی کے قورمے، سٹیم بروسٹ اور چکن بریانی سے کی گئی تھی.
حاجی صاحب نے دور اندیشی سے کام لیا تھا.

Comments

خواجہ مظہر صدیقی

خواجہ مظہر صدیقی

خواجہ مظہر صدیقی بچوں کے ادیب، کالم نگار، تربیت کار و کمپیئر ہیں۔ تین کتابیں بعنوان نئی راہ، دھرتی ماں اور بلندی کا سفر، شائع ہو چکی ہیں۔ تجارت پیشہ ہیں، ملتان سے تعلق ہے

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.