ہے کوئی ان کا نوٹس لینے والا - حمیرہ خاتون

لوگوں کو شاید احساس نہیں ہے کہ ہمارے اشتہارات اور ڈراموں میں اس قدر آزادی دکھائی جا رہی ہے کہ جو واقعتا معاشرے کو تباہی کی طرف لے جا رہی ہے. ڈراموں میں رات کے وقت بیڈروم کے مناظر دکھانے کی کیا ضرورت ہے؟ جن باتوں اور احتیاطوں کا ایک عام سے گھر میں بھی خیال رکھا جاتا ہے، حیرت ہے کہ ان جزئیات کا خیال ڈراموں اور اشتہارات میں نہیں رکھا جاتا، اور پھر شکوہ کیا جاتا ہے نئی نسل کے بگڑنے کا، کسے مدعی کریں، کس سے انصاف چاہیں۔

ہے کوئی ان کو چیک کرنے والا؟؟
ہے کوئی ان کا نوٹس لینے والا؟؟
ہے کوئی ان کو روکنے والا ؟؟
حکومت تو لبرل بننے کی دوڑ میں آنکھیں بند کیے سو رہی ہے۔

Comments

حمیرہ خاتون

حمیرہ خاتون

حمیرہ خاتون کو پڑھنے لکھنے سے خاص شغف ہے۔ بچوں کی بہترین قلم کار کا چار مرتبہ ایوارڈ حاصل کر چکی ہیں۔ طبع آزمائی کے لیے افسانہ اور کہانی کا میدان خاص طور پر پسند ہے۔ مقصد تعمیری ادب کے ذریعے اصلاح ہے

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.