آئیے! نئے سال کو نیا بنائیں - حمیرہ خاتون

پیارے نبی کریم ﷺ نے فرمایا: جس کا آج اس کے گزشتہ کل سے بہتر نہیں، وہ تباہ ہو گیا۔
اس ارشاد کا مفہوم یہ ہے کہ انسان کو ہر روز بہتر کام کرنے کی جستجو اور سعی کو زندہ رکھنا چاہیے۔

ساعتیں گھنٹوں میں، گھنٹے دنوں میں، دن مہینوں میں اور مہینے سالوں میں تبدیل ہوتے جاتے ہیں، ایک کے بعد ایک سال گزرتا جاتا ہے، یوں عمر رواں کی برف پگھلتی جاتی ہے۔

ایک کامیاب انسان وہ ہے جو اس عمر کو اچھے اعمال سے مزین کرے۔ ایک بار پھر نیا سال آپ کے دروازے پر دستک دینے تیار کھڑا ہے۔ کیا آپ اس کے استقبال کے لیے تیار ہیں؟
آئیے! اس نئے سال میں کچھ منفرد کرتے ہیں۔ کچھ انوکھا سا، کچھ نیا سا !

1۔ اپنے کاموں کی ترجیحی فہرست بنا لیں، مثلا تعلیم، نوکری، گھر، عبادت، احباب، تفریح

2۔ ان کاموں کو ششماہی، سہ ماہی، ماہانہ، ہفتہ وار اور روزانہ کی فہرست میں مزید تقسیم کر لیں۔

3۔ اگر آپ طالب علم ہیں تو پہلی ترجیح تعلیم ہونی چاہیے، جس میں اسکول / کالج / یونیورسٹی اور پھر مدرسہ / سینٹر کی ترجیح اول نمبر پر ہونی چاہیے۔

4۔ اپنی آمدنی وذاتی خرچ کا گوشوارہ تیار کریں۔ یہ ماہانہ یا ہفتہ وار ہو سکتا ہے۔ اس سے آپ کو آئندہ گھر کا بجٹ بنانے میں سہولت حاصل ہوگی۔

5۔ اس سال ایک ڈائری بنائیں جس میں روزانہ کی بنیاد پر کرنے والے کام لکھیں۔ روز رات کو آنے والے کل کے کاموں کی فہرست بنا لیں۔ روز رات کو دن بھر کیے جانے والے کاموں کا جائزہ لیں۔ جو کام کر چکے ہیں، ان کو کاٹ دیں۔ جو رہ گئے اسے دوسرے دن کی پلاننگ میں شامل کر لیں۔ کوئی غیرمعمولی کام یا بات بھی اس میں نوٹ کر لیں۔

6۔ اپنی ڈائری میں خاص فون نمبرز، ای میل ایڈریسز، اور ضروری معلومات بھی لکھ کر محفوظ کر لیں۔ ساتھ میں ریفرنس کے لیے کوئی اشارہ بھی تحریر کر سکتے ہیں۔ آج کل زیادہ تر لوگ اس طرح کا تمام ڈیٹا اپنے سیل فون میں محفوظ رکھتے ہیں، مگر سیل فون کھو جانے، چھن جانے کی صورت میں ایسے لوگ بہت نقصان اٹھاتے ہیں۔ لہذا احتیاطا یہ کرنا بہتر ہوگا۔

7۔ ای میل اکاؤنٹ بھی کم سے کم دو بنائیں۔ اپنا اہم ڈیٹا اپنے آپ کو دونوں اکاؤنٹس پر ای میل کر دیں۔ اپنے نوٹس، اپنی چیٹ، اپنا ڈیٹا، فون نمبرز، تصاویر وغیرہ، اس طرح ضرورت پڑنے پر یا سیل فون یا کمپیوٹر خراب ہونے کی صورت میں بھی آپ کا ڈیٹا محفوظ رہے گا۔ ممکن ہو تو اس کا بیک اپ بنا کر بھی یو ایس بی یا سی ڈی میں بھی محفوظ رکھ سکتے ہیں۔

8۔ مطالعہ انسانی ذہن کو جلا بخشتا ہے، اسے وسعت و کشادگی عطا کرتا ہے، ذہن کے بند دروازوں کو کھولتا ہے، اپنی تعلیم، نوکری، مذہب، پاکستان، کرنٹ ایشوز، اپنی دلچسپی کے متعلق اچھی کتابیں، اور ریسرچ مواد تلاش کریں اور ان کو مستقل اپنے مطالعے میں رکھیں۔

9۔ جاب کے ساتھ ساتھ اسکلز یعنی مہارتوں کی بھی بہت اہمیت ہے۔ اپنے فارغ وقت میں آپ کوئی بھی ہنر سیکھ سکتے ہیں، اس سے متعلق شارٹ کورسز کر سکتے ہیں، اس کی پریکٹس کر سکتے ہیں، کوشش کریں کہ ایک وقت میں ایک ہنر سیکھیں مثلا ڈرائیونگ، کمپیوٹر آپریٹنگ، پروگرامنگ، انگلش لینگویج، عربی لینگویج، موبائل ہارڈ وئیر، گرافکس، نیٹ ورکنگ، پلمبرنگ، الیکٹریشن، غرض جس میں آپ کو دلچسپی ہو۔ کم از کم اتنا ضرور سیکھ لیں کہ گھر کے چھوٹے چھوٹے کام خود کر سکیں۔

10۔ ہر سال کچھ نیا کرنے کی کوشش ضرور کیجیے۔ کوئی ہنر، کوئی کورس، کوئی ڈپلومہ، کوئی زبان، قرآن کی کوئی سورہ حفظ کرنا، کسی اسکل میں اضافہ کرنا، کسی کو کچھ سکھانا، اس سے نہ صرف آپ کی اسکلز میں اضافہ ہوگا بلکہ آپ کی پیشہ ورانہ زندگی میں بھی بہتری آئے گی۔

11۔ اپنے کاموں میں عبادت کو ترجیح دیں۔ پنج وقتہ نماز کو معمول بنانے کی کوشش کریں۔ رات جلدی سونے اور صبح قبل از فجر اٹھنے کی عادت ڈالیں۔ نماز فجر کے بعد ایک رکوع تلاوت قرآن پاک، ترجمہ و تفسیر پڑھنے کی کوشش کریں۔ اس سے نہ صرف آپ کے کام آسان ہوں گے، دن بھر اللہ کی مدد شامل حال ہوگی، بلکہ آپ کے ذہن میں بھی وسعت اور کشادہ دلی پیدا ہو گی۔

12۔ اللہ تعالی نے انسان کو ایک خاندان میں پیدا فرمایا ہے اور اللہ پسند کرتا ہے کہ رشتہ داروں سے صلہ رحمی اختیار کی جائے۔ تعلقات نبھائے جائیں لہذا قریبی اور دور کے رشتہ داروں سے ماہانہ یا سہ ماہی یا ششماہی ملاقاتوں کا اہتمام کریں۔

13۔ تین مہینے میں ایک دن سماجی سرگرمی کے لیے رکھیں۔ اپنے ساتھیوں یا بچوں کے ساتھ کسی خیراتی اسپتال، فلاحی کلینک، مدرسہ، پارک، مارکیٹ، کچی آبادی یا یتیم خانہ کا دورہ کریں۔ لوگوں کے مسائل معلوم کریں اور جس حد تک ممکن ہو، ان کو حل کرنے کی کوشش کریں۔

14۔ فیملی آپ کا سب سے مضبوط سہارا ہے، اپنی فیملی کو ضرور وقت دیں۔ روزانہ کچھ وقت اپنے والدین، بہن بھائی، بیوی بچوں کے ساتھ گزاریں۔ ان کی دلچسپیاں جانیں۔ مسائل معلوم کریں۔ ان کو حل کرنے کی کوشش کریں۔اس طرح فیملی کے لوگوں میں مضبوط بانڈ تشکیل پاتا ہے۔ جو مشکل میں آپ کو تھامے رکھتا ہے۔

15۔ تفریح نہ صرف انسانی ذہن کو کام کے بوجھ سے آزاد کرتی ہے، بلکہ کائنات کی خوبصورتی کو محسوس کرنے کا ایک موقع بھی فراہم کرتی ہے۔ اپنی فیملی اور بچوں کے ساتھ ششماہی یا سالانہ تفریح کا ضرور اہتمام کریں۔ دنیا کے جھمیلوں سے نکل کر، گھر اور نوکری کی فکروں کو چھوڑ کر کچھ وقت قدرت کی رعنائیوں پر غور کریں۔ خوبصورت پھول، پودے، گھنے سایہ دار درخت، دور تک پھیلا ہوا سبزہ، اونچے اونچے پہاڑ، ٹھاٹیں مارتا سمندر ، یہ سب عجائبات انسانی ذہن کو نہ صرف تازگی و فرحت کا احساس فراہم کرتے ہیں بلکہ اللہ تعالی کی قدرت پر یقین کو بھی بڑھاتے ہیں۔

16۔ اللہ اور بندے کا تعلق بہت خاص، بہت انوکھا اور بہت عجیب ہے، جو اللہ سے جتنا قریب ہوگا ، وہ اتنا ہی اس سے لاڈ اور خوف رکھے گا۔ یہ زندگی اور یہ دل کے اندر اٹھنے والی بہت ساری خواہشات سب اسی کی پیدا کردہ ہیں، وہ انسان کو آزماتا ہے کہ وہ اس کی مانتا ہے یا دل کی، اللہ کو اپنا دوست، اپنا رازداں بنا لیجیے، کچھ لمحات نکالیے۔ رات کا تیسرا پہر بہت اچھا ہوتا ہے، اس سے دل کی سب باتیں کریے، چپکے چپکے سرگوشیاں کریے، اسے بتائیے آپ کا جو دل چاہتا ہے، جو خوشی ملی ہے، جو دل دکھا ہے، سب کہہ دیے، کچھ عرصے بعد آپ کو محسوس ہونے لگا ہے کہ وہ آپ کو سن رہا ہے، جواب دے رہا ہے، آپ کو اطمینان قلب کی وہ دولت نصیب ہو جائے گی جس کے آگے ساری دنیا ہیچ ہے۔ اللہ سے اپنے تعلق کو اپنے بہترین دوست جیسا تعلق بنا لیجیے، آپ اس کی مانیے، وہ آپ کو نوازے گا اور جس کو اللہ مل جائے، اسے اور کیا چاہیے.

تو ساتھیو! پھر کیا ارادہ ہے؟
اس سال کچھ نیا، کچھ انوکھا، کچھ منفرد کرنا ہے نا!
تو!
بس تیار ہو جائیں، نئے سال کے استقبال کے لیے!

Comments

حمیرہ خاتون

حمیرہ خاتون

حمیرہ خاتون کو پڑھنے لکھنے سے خاص شغف ہے۔ بچوں کی بہترین قلم کار کا چار مرتبہ ایوارڈ حاصل کر چکی ہیں۔ طبع آزمائی کے لیے افسانہ اور کہانی کا میدان خاص طور پر پسند ہے۔ مقصد تعمیری ادب کے ذریعے اصلاح ہے

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.