ٹیلی گرام پر اکاؤنٹ کیوں بنایا جائے؟ حنا نرجس

یہ آرٹیکل آپ ہی کے لیے ہے ? \r\nچند ماہ قبل مجھے واٹس ایپ کے علاوہ دوسرے میسجنگ ایپس کے بارے میں جاننے کا اشتیاق ہوا تو لائن، ٹیلی گرام، allo، وغیرہ کو ٹرائے کیا. فیس بک کا میسنجر پہلے ہی آزمایا ہوا تھا اور یہ مجھے بالکل پسند نہیں ہے. ان سب میں مجھے ٹیلی گرام بے حد پسند آیا اور مسلمان جو چیز اپنے لیے پسند کرتا ہے وہ اپنے بہن بھائیوں تک بھی ضرور پہنچاتا ہے تو اسی لیے آج ٹیلی گرام کے حوالے سے آپ سب سے مخاطب ہوں. یہ بہت حد تک واٹس ایپ کی طرح ہی ہے، اس لیے اس سے موازنہ کرتے ہوئے بات کریں گے تو آسانی رہے گی. اس کے نمایاں فیچرز مختصراً نمبر وار دیکھتے ہیں.\r\n\r\n1. ٹیلی گرام پر اکاؤنٹ فون نمبر کے ساتھ ہی بنے گا لیکن واٹس ایپ کے برعکس اس میں میسجز کے تبادلے میں فون نمبرز کے بجائے آئی ڈیز شو ہوتی ہیں. یہ اس کا سب سے بڑا پلس پوائنٹ ہے. فون نمبرز صرف انہی فرینڈز اینڈ فیملی کے شو ہوں گے جو پہلے سے آپ کی فون بک میں محفوظ ہیں.\r\n\r\n2. یہی معاملہ گروپس کا ہے. وہاں بھی ممبرز ایک دوسرے کی آئی ڈیز دیکھ سکتے ہیں نمبرز نہیں.\r\n\r\n3. واٹس ایپ "براڈ کاسٹ لسٹ" کا متبادل یہاں "چینل" ہے. چینل کے لفظ سے کسی غلط فہمی کا شکار نہ ہوں. اس کا آسان سا مطلب ہے، ون سائیڈڈ کمیونیکیشن. یہ سب سے بڑی وجہ ہے میرے ٹیلی گرام کو پسند کرنے کی ?\r\nآپ ایک پبلک چینل بنا کر اس میں اپنی فون بک سے بھی ممبرز کو ایڈ کر سکتے ہیں اور اس کا لنک مختلف پلیٹ فارمز جیسے ایس ایم ایس، فیس بک، ای میل، واٹس ایپ وغیرہ پر دوسروں کے ساتھ شیئر کر کے انہیں اپنا چینل جوائن کرنے کی دعوت دے سکتے ہیں. چینل سے آپ جو بھی ٹیکسٹ یا میڈیا فائل براڈ کاسٹ کریں گے، وہ تمام ممبرز کو پہنچ جائے گی لیکن وہ چینل پر واپس آپ کو میسج نہیں کر سکتے. انہیں آپ سے کمیونیکیشن کے لیے پرسنل میسج کرنا ہو گا، وہ بھی تب ممکن ہے جب آپ نے انہیں اپنی پرسنل آئی ڈی بتا رکھی ہو. \r\nکتنے لوگوں نے آپ کے چینل تک رسائی حاصل کی؟ یہ جاننے کے لیے ویوز کی تعداد ہر میسج کے ساتھ آپ دیکھ سکتے ہیں. \r\nاچھا آپ خود تو ممبرز کی آئی ڈیز دیکھ سکتے ہیں کیونکہ آپ چینل کے ایڈمنسٹریٹر ہیں، لیکن ممبرز ایک دوسرے کی آئی ڈیز نہیں دیکھ سکتے. \r\nپھر آپ چاہیں تو اپنے علاوہ کسی اور کو بھی ایڈمنسٹریٹر بنا سکتے ہیں.\r\n\r\n5. گروپ ہو یا چینل، مزے کی بات یہ ہے کہ کوئی ممبر جب بھی اسے جوائن کرے گا وہ شروع سے لے کر تمام پوسٹس دیکھ سکے گا. دیر سے آنے والوں کو یہاں دیر سے آنے پر کوئی افسوس نہیں ہو گا. ?\r\n\r\n5. ٹیلی گرام کی مقبولیت کی ایک بڑی وجہ کلاؤڈ سٹوریج کا مہیا کیا جانا اور ایک سے زیادہ ڈیوائسز سے اپنے اکاؤنٹ تک رسائی دینا ہے. گھبرائیے نہیں آسان الفاظ میں بتاتی ہوں. دیکھیں آپ کو اپنا ای میل اکاؤنٹ یا فیس بک اکاؤنٹ کبھی بھی کہیں بھی کھولنا ہو، آپ کو پریشانی نہیں ہوتی. بس ای میل ایڈریس (یا فون نمبر) دیا، پاس ورڈ لکھا اور اپنے اکاؤنٹ تک پہنچ گئے. ان پر آپ کا ڈیٹا محض اس وجہ سے ضائع نہیں ہوتا کہ آپ کا فون خراب ہو گیا یا آپ نے فیکٹری سیٹنگز ری سٹور کی ہوں یا اپنے لیپ ٹاپ میں ونڈوز دوبارہ انسٹال کی ہو، وغیرہ وغیرہ.\r\nتو بس تسلی رکھیں ٹیلی گرام آپ کی امانتیں اپنے پاس سنبھال کر رکھتا ہے. ?\r\n\r\n6. اب یہ فیچر بھی یقیناً آپ کو بہت پسند آئے گا. واٹس ایپ پر آپ ایک بار میسج بھیج دیں تو پھر اسے ایڈٹ نہیں کر سکتے جبکہ ٹیلی گرام نے حال ہی میں ایڈیٹنگ کی سہولت دی ہے. بالکل ایسے ہی جیسے آپ فیس بک سٹیٹس کو ایڈٹ کر لیتے ہیں. اپنے بھیجے گئے کسی بھی میسج کو ہلکا سا ٹَیپ کریں (پریس اینڈ ہولڈ نہیں کرنا)، ایڈٹ کا آپشن آ جائے گا. مجھے اس فیچر نے بہت فائدہ دیا ہے. لیسن وغیرہ بنانے یا لکھنے لکھانے میں.\r\n\r\n7. اسی طرح چینل کے کسی بھی انفرادی میسج کا لنک آپ شیئر کر سکتے ہیں. کھولنے والا براہ راست اس میسج پر پہنچ جائے گا. جی ہاں واقعی!!! \r\nچینل میں کسی بھی میسج کے ساتھ بنے ایرو پر کلک کریں پھر میسج براہ راست فارورڈ کر دیں یا "کاپی لنک" پر ٹَیپ کریں لنک کاپی ہو جائے گا. اب جہاں چاہیں شیئر کریں.\r\n\r\n8. قلمکار بہن بھائی اپنا چینل بنا لیں تو دو فائدے ہوں گے. ایک تو آپ کی تمام تحاریر یا ان کے لنکس قارئین کو ایک ہی پلیٹ فارم پر مل جائیں گی. دوسرے یہ سب ریکارڈ کے طور پر محفوظ بھی رہیں گی. یعنی ٹیلی گرام انہیں اپنے پاس سنبھال کر رکھے گا. جب کسی خاص تحریر تک پہنچنا چاہیں، ٹاپ رائیٹ پر بنے ڈاٹس پر کلک کریں اور "سرچ" میں تحریر کا "کِی ورڈ" لکھ کر سرچ کر لیں، تحریر آپ کے سامنے ہو گی. جو قلمکار بہن بھائی ٹِپ نمبر ٩ پر عمل کریں گے، یقیناً مجھے دل سے دعائیں دیں گے. ? \r\nمیری تحاریر پر مشتمل چینل، جس پر میں (بشرطِ زندگی) بتدریج اپنی تحاریر اپ لوڈ کرتی رہوں گی، یہ ہے،\r\n\r\nWhen thoughts take a word-form ?\r\nhttps://telegram.me/HinaNarjis_WriteUps\r\n\r\nیاد رہے آپ کسی بھی چینل کو جوائن تب کر سکیں گے جب آپ اپنا اکاؤنٹ ٹیلی گرام پر بنا چکے ہوں.\r\n\r\n9. ٹیلی گرام پر اکاؤنٹ کیوں بنایا جائے؟ تو سب سے بڑا فائدہ اچھے اور مفید چینلز کو جوائن کرنے یا اپنے بچوں کو کروانے کا ہے. پرائیویسی بھی رہے گی، فیس بک پر "ٹُو سائیڈڈ کمیونیکیشن" میں ضائع ہونے والا وقت بھی بچے گا اور اپنی پسند سے مختلف تعلیمی و اصلاحی چینلز سے مستفید بھی ہوتے رہیں گے. میں ہمیشہ کہتی ہوں کہ سیل فون اب ہمارے ہاتھوں میں ہر وقت رہتا تو ہے ہی، کیوں نہ اس کے استعمال کو تعمیری و مثبت بنایا جائے اور ہر نیا دن ہمارے علم میں اضافے کا باعث بنے.\r\n\r\n10. چینلز کے علاوہ یہاں "بوٹس" ہیں جو مختلف کاموں میں آپ کی مدد کرتی ہیں. جیسے مجھے ووٹنگ کرنا تھی تو ووٹ بوٹ کے ذریعے بآسانی پول بنایا اور اپنے ریڈرز کلب کے ممبرز کی رائے جان لی. ہم دراصل اس پلیٹ فارم پر ایک کتاب کا انتخاب کر کے مل کر مطالعہ کر رہے ہیں. دو ہفتے کا وقت دیا گیا ہے، پھر متعلقہ کتاب کے حوالے سے ہلکا پھلکا آن لائن کوئز بھی منعقد ہو گا. \r\nآپ بھی یہ چینل جوائن کریں تو مجھے خوشی ہو گی. لنک ہے، \r\nLet's Read Together ?\r\nAlways feel motivated for reading :)\r\nhttps://telegram.me/letsreadtoghether\r\n\r\n11. سیٹنگز کو آپ خود بآسانی ایڈجسٹ کر سکتے ہیں، میرا خیال ہے مجھے تفصیل میں جانے کی ضرورت نہیں. ایک بات ضرور ذہن میں رہے کہ آپ کا اکاؤنٹ خودکار طریقے سے ختم بھی ہو سکتا ہے اگر آپ اسے ایک خاص مدت تک بالکل استعمال نہ کریں. \r\nخیر، پریشان نہ ہوں، سیٹنگز میں "پرائیویسی اینڈ سیکیورٹی" میں جا کر "اکاؤنٹ سیلف ڈیسٹرکس" کی مدت ایک سال منتخب کر لیں. \r\nباقی نوٹیفکیشنز وغیرہ آف ہی کر لیں تو بہتر ہے کیونکہ اس پر کچھ ارجنٹ قسم کے میسجز تو شاید موصول نہ ہوں. بس جب وقت ملے، اکاؤنٹ چیک کر لیں.\r\n\r\n12. اگر آپ نے میرے واٹس ایپ پر لکھے آرٹیکلز نہیں پڑھے تو ضرور پڑھ لیجیے. میری فیس بک ٹائم لائن پر، دلیل ویب سائٹ پر یا میرے ٹیلی گرام چینل پر یا محض "واٹس ایپ یوزرز کی مشکلات کا حل - حنا نرجس" لکھ کر گوگل کر لیں. \r\nجس طرح واٹس ایپ پر آپ کو ایسا گروپ بنانا سکھایا تھا جس کے صرف آپ خود ممبر ہوتے ہیں اسی طرح یہاں بھی گروپ حتی کہ چینل بھی بنا سکتے ہیں. اس طرح اپنے کام وام، لکھنے لکھانے اور ایڈیٹنگ کے لیے آپ کو بہترین جگہ میسر آ جاتی ہے.\r\n\r\n13. ایک نمایاں فیچر "سیکرٹ چیٹ" کا بھی ہے. مجھے اس میں زیادہ دلچسپی نہیں لیکن بہرحال اچھا فیچر ہے. آپ میسجز کے خود بخود ڈیلیٹ ہونے کی مدت اس میں سیٹ کر سکتے ہیں. ٹائم سیٹ کرنے کے بعد آپ جو میسجز کریں گے، وہ آپ کے سیٹ کیے گئے وقت کے بعد خود بخود مستقل طور پر غائب ہو جائیں گے.\r\n\r\nچلیے آرٹیکل تو آپ نے پڑھ لیا. اب جلدی سے اپنا اکاؤنٹ بنا لیجیے. پھر ٹاپ لیفٹ پر بنی تین لائنز پر کلک کر کے اپنے کونٹیکٹس چیک کریں کہ اور کون کون ٹیلی گرام پر ہے ورنہ باقی لوگوں کو انوائٹ کر لیں. اکاؤنٹ بنانے کے لیے سیل فون سے یہاں کلک کریں،\r\n\r\nhttps://play.google.com/store/apps/details?id=org.telegram.messenger\r\n\r\nاس کے بعد آپ کو ضرورت ہو گی اچھے اور مفید چینلز کے بارے میں جاننے کی تو اس کے لیے آپ کو آنا ہو گا میرے چینل پر جہاں بہت سی مفید ٹِپس اور ٹیکنالوجی سے متعلق چھوٹے چھوٹے مسائل کا حل ہم مل جل کر تلاش کرتے رہتے ہیں.\r\n\r\nRandom Beneficial Stuff\r\nMy today is better than yesterday :)\r\nhttps://telegram.me/RandomBeneficialStuff\r\n\r\nایک بار ٹیلی گرام کو آزمائیے گا ضرور ? \r\nآپ کا فیڈ بیک جان کر مجھے اچھا لگے گا.\r\n

Comments

حنا نرجس

حنا نرجس

اللّٰہ رب العزت سے شدید محبت کرتی ہیں. ہر ایک کے ساتھ مخلص ہیں. مسلسل پڑھنے پڑھانے اور سیکھنے سکھانے پر یقین رکھتی ہیں. سائنس، ٹیکنالوجی، ادب، طب اور گھر داری میں دلچسپی ہے. ذہین اور با حیا لوگوں سے بہت جلد متاثر ہوتی ہیں.

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں