حکومت سے تین اہم سوال - سنگین زادران

اچھا 20 کروڑ پاکستانیو کو کتنی صفائی سے استرا پھیرا گیا ہے اس مرتبہ۔ ڈان میں خبر چھپی اور حکومت نے اعلامیہ جاری کیا کہ خبر جھوٹ ہے۔ اس سے تین سوال جنم لیتے ہیں جن سے کئی ذیلی سوالات مزید جنم لیتے ہیں۔ خیر جوابات سب کے درکار ہیں۔\n\nپہلا سوال:\nجب حکومت یہ اقرار کر چکی ہے کہ ڈان میں چھپنے والی خبر کسی نے لیک نہیں کی بلکہ ایک من گھڑت خبر ہے تو وزیرِ داخلہ نے پرویز رشید کی برطرفی کی وجہ یہ کیوں بتائی کہ پرویز رشید خبر رکوانے میں ناکام رہے؟\nاگر حکومت کی پہلی بات کو مان لیا جائے کہ ڈان نے جھوٹی کہانی لگائی تو اسکا مطلب وزیرِ داخلہ کے بیان کی روشنی میں یہ بنتا ہے کہ پرویز رشید کو پتہ تھا کہ ڈان کے پاس جھوٹی خبر ہے اور وہ رکوانے میں ناکام رہے۔ تو یہ کیسے ممکن ہے کہ پرویز رشید کو جھوٹی خبر کا تو علم ہو اور یہ علم نہ ہو کہ وہ جھوٹی خبر ڈان کو دی کس نے ہے۔\nوزیرِ داخلہ کا بیان حکومت کے بیان کی روشنی میں یہ مطلب بھی دیتا ہے کہ ریاست کا وزیرِ اطلاعات و نشریات فوج اور ملک کے خلاف لگنے والی جھوٹی خبر کا پتہ ہونے کے باوجود خاموش رہا۔ اس خبر کی وجہ سے جس کی وجہ سے پوری دنیا میں پاکستان کی رسوائی ہوئی۔ وزیرِ داخلہ صاحب کیا یہ قوم سے غداری نہیں ہے اور اس پر وزیرِ اطلاعات و نشریات پرویز رشید کے خلاف آرٹیکل 6 کے تحت کاروائی نہیں ہونی چاہیے؟\n\nدوسرا سوال:\nحکومت نے کہا کہ خبر جھوٹی ہے جو ڈان نے شائع کی۔ اور وزیرِ داخلہ کو برطرف کیا گیا اس وجہ سے کہ وہ جھوٹی خبر پتہ ہونے کے باوجود ملک دشمنی کا مظاہرہ کرتے رہے اور خبر نہ رکوائی۔ چلو مان لیا اس بات کوبھی۔ اصل سوال تو ابھی بھی وہیں کا وہیں کھڑا ہے۔ کہ ڈان کو جھوٹی خبر دی کس نے؟ بھئی دیکھیں نا حکومت ایک جھوٹی خبر لگنے کی وجہ سے اپنے ایک وزیر کو برطرف کر رہی ہے اس وجہ سے کہ جھوٹی خبر نہ رکوا سکا۔ تو جناب جھوٹی خبر آئی کہاں سے؟ وزیر تو قربانی بکرا بنا رہے ہیں اصل سوال کا جواب کیوں نہیں دے رہی حکومت کہ جھوٹی خبر ڈان کو دی کس نے؟\n\nتیسرا سوال:\nڈان نے جھوٹی کہانی چھاپی حکومت نے کہا جھوٹ ہے۔ اچھا اس جھوٹ کی وجہ سے دنیا بھر میں پاکستان کو دھشت گرد کہا گیا، مودی کی ساکھ بحال ہو گئی، ضربِ عضب کو دنیا والوں نے ڈرامہ قرار دیا۔ جھوٹی کہانی چھاپنے والوں کے خلاف حکومت نے اب تک کوئی کاروائی کیوں نہیں کی اگر حکومت خود ملوث نہیں ہے تو؟ حکومت کو کس بات کا ڈر ہے جو ڈان کے خلاف کاروائی سے گبھرا رہی ہے؟\n\nجاننا قوم کا حق ہے۔ جمہوری، آئینی اور معاشرتی طور پر قوم سے سچائی چھپانا جرم ہے۔ حکومت کو چاہیے کہ اولین فرصت میں ان سوالات کا جواب دے کر عوام کو مطمئن کرے۔