ایک عام پاکستانی کا خواب - ریحان اصغر سید

ریحان اصغر سید سوشل میڈیا نے تو عوام کو صرف زبان دی تھی مگر جب سے دہلی میں عام آدمی پارٹی جھاڑو پھیر کر اقتدار کی پیڑھی پر بیٹھی ہے، گویا عام آدمی کے بھی پر نکل آئے ہیں۔ اب یہ لوگ بھی اپنے آپ کو سنجیدہ لینے لگے ہیں۔ ہر معاملے میں اپنی ماہرانہ رائے دینے کے علاوہ برابری کے مواقع، مساوات، توازن جیسی عجیب و غریب چیزوں کا مطالبہ کرتے ہیں۔ اب ہمارے سلیبریٹیز کے خوابوں کے سلسلے کو ہی لے لیجیے۔ عام آدمی کو اس کی بھنک ملنے کی دیر تھی کہ انھوں نے بھی امتیازی سلوک اور عدم انصاف کی دہائی دینی شروع کر دی۔\nان کا پرزور مطالبہ ہے کہ خوابوں کے سلسلے میں عام آدمی کے خواب کو بھی جگہ اور اہمیت دی جائے۔ اس سے پہلے کہ یہ اکا دکا آوازیں کسی منظم احتجاج کی صورت اختیار کریں اور جنتا ہمارے گھر کے دروازے پر دھرنا دینے پر تل جائے، ہم اپنی ٹیکنکل ٹیم کے ہمراہ ایک عام آدمی اللہ دتہ کے گھر پہنچ چکے ہیں۔ اللہ دتہ زمین داری کے شعبہ سے وابستہ معمولی پڑھا لکھا انسان ہے اور ایک عام آدمی کی تمام شرائط پر پورا اترتا ہے۔\n\nشام ہو چکی ہے۔ دھوتی کرتے میں ملبوس اللہ دتہ بھینسوں کا دودھ دوہنے کے بعد کھرلی کی صفائی کر رہا ہے۔ مرغیوں کو ڈربے میں بند کر کے اللہ دتہ نے اپنی چارپائی صحن میں ہی بچھا لی ہے اور اب ٹینڈے اور لسی کے ساتھ روٹی کھا رہا ہے جو ابھی اس کی موٹی تازی اور کالی کلوٹی بیوی اس کے سامنے پٹخ کر گئی ہے۔ لیکن اس سے پہلے اللہ دتہ اپنے چائنا کے موبائل سے فیس بک پر یہ اسٹیٹس ڈالنا نہیں بھولا کہ\n”ہیونگ ڈنر ایٹ پی سی وی تھرٹی ادرز.“\nڈنر کر کے اللہ دتہ چارپائی پر نیم دراز ہو کر اب ٹوئٹر سے لاگ ان ہے، اور پانامہ لیکس پر ایک طنزیہ ٹویٹ کی ہے جو کہ درجنوں دفعہ ری ٹویٹ ہو چکی ہے اور کافی پسند کی جا رہی ہے۔ اس کے بعد اللہ دتہ فیس بک پر اپنی فی میل آئی ڈی سے لاگ ان ہو چکا ہے اور مونچھوں کو تائو دیتے ہوئے اپنے مداحوں سے چِٹ چیٹ میں مصروف ہے۔ آہستہ آہستہ اللہ دتہ پر نیند غلبہ کر رہی ہے۔ اپنے موبائل کو سرہانے کے نیچے رکھ کر اللہ دتہ خواب خرگوش کے مزے لے رہا ہے۔\nسچ پوچھیں تو ہمیں اللہ دتہ کے خواب میں جانے کے خیال سے ہی کوفت ہو رہی ہے۔ عام لوگوں کے خواب بھی بڑے غیر مہذب اور طویل ہوتے ہیں۔ پتہ نہیں آج اللہ دتہ کے ساتھ کہاں کہاں کی خاک چھاننا پڑے گی۔ چلیں خیر ! آپ آنکھیں بند کر لیں میں منتر کا جاپ شروع کرتا ہوں۔\n\nاب ہم اللہ دتہ کے خواب میں ہیں۔ کمبخت اللہ دتہ خواب میں بھی اپنا ہی گھر دیکھ رہا ہے۔ بس فرق صرف اتنا ہے کہ اب اس کا گھر پکّا اور دو منزلہ ہو چکا ہے۔ چائنا کے موٹرسائیکل کی جگہ ہنڈا 125 نے لے لی ہے۔ گھر کے جس کونے میں دو بھینسیں بندھی تھی وہ اب چار ہو چکی ہیں۔ اللہ دتہ بوسکی کی نئی قمیض اور لٹھے کی سفید شلوار میں خوب جچ رہا ہے۔ اس کی کلائی میں موجود راڈو گھڑی لشکارے مار رہی ہے جبکہ دوسرے ہاتھ میں آئی فون چمک رہا ہے۔ اس کی بیوی اور بچوں نے بھی صاف ستھرے کپڑے پہن رکھے ہیں اور وہ اللہ دتہ کے ساتھ بہت عزت سے پیش آ رہے ہیں۔ اتنی عزت پا کر اللہ دتہ کی آنکھوں میں خوشی سے آنسو آ گئے ہیں۔ اللہ دتہ ان کو موٹر بائیک پر بٹھا کر سسرال لے جانے کی تیاری کر رہا ہے۔\n\nمنظر بدلتا ہے۔\nیہ ایک عدالت کا منظر ہے۔ اللہ دتہ کی آبائی زمین پر تقریباً سو سال پہلے چوہدریوں نے قبضہ کر لیا تھا۔ اللہ دتہ کا دادا اور والد، پیشیاں اور تاریخ پر تاریخ بھگتتے پورے ہو گئے لیکن کیس کا فیصلہ نہیں ہو رہا تھا۔ آج جج اللہ دتہ سے بہت احترام سے پیش آ رہا ہے اور اس سے باقاعدہ معذرت کر رہا ہے کہ حق پر ہونے کے باوجود اسے، اس کے خاندان کو اتنی ذلت اور انتظار کی زحمت اٹھانی پڑی۔ اس کے بعد جج چوہدریوں کو ڈانٹتے ہوئے فیصلہ سناتا ہے کہ نہ صرف اس کی زمین واپس کی جائے بلکہ آج تک مقدمے کی مد میں ہونے والا خرچہ بھی حساب لگا کر واپس کیا جائے۔ اللہ دتہ خوشی سے بھنگڑے ڈال رہا ہے۔\n\nمنظر بدلتا ہے۔\nاللہ دتہ چوپال میں یار دوستوں کے ساتھ بیٹھا ہے۔ اللہ دتہ کا دوست کمالہ کہہ رہا ہے کہ یار جب سے ہمارے پنڈ میں گیس آئی ہے، ہمیں بڑی سہولت ہو گئی ہے۔ بجلی کی لوڈ شیڈنگ ختم ہوئے بھی کئی سال ہو گئے ہیں اور بجلی اتنی سستی ہو گئی ہے کہ بیس، تیس روپے سے زیادہ بل نہیں آتا۔ ہمارے پنڈ کا سرکاری ہسپتال چھوٹا سہی لیکن بین الاقومی معیار کا ہے۔ اور سنا ہے پیڑول کی قیمت مزید پچاس پیسے کم ہو کر ایک روپیہ میں دس لیٹر رہ گئی ہے۔ عمران خان صاحب اپنی تقریر میں کہہ رہے تھے کہ حکومت عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہی ہے، ابھی پیٹرول مزید سستا کیا جا سکتا ہے۔\n\nمنظر بدلتا ہے۔\nپاکستان انڈیا ورلڈ کپ کا فائنل لاہور میں کھیلا جا رہا ہے۔ اللہ دتہ بمع خاندان تماشائیوں میں بیٹھا میچ دیکھ رہا ہے۔ پاکستان نے پچاس اوور میں 970 رن بنا لیے ہیں۔ جس میں آفریدی کی سو بالوں پر ٹرپل سینچری اور باقی تقریباً ہر بیٹسمین کی سینچری شامل ہے جبکہ انڈیا کے صرف تینتس رن پر نو کھلاڑی آوٹ ہو چکے ہیں۔ تماشائیوں کی خوشی دیدنی ہے۔\nمظر بدلتا ہے۔\n\nاللہ دتہ ٹی وی پر خبریں سن رہا ہے جس میں پاکستانی وزیراعظم کا بیان چل رہا ہے کہ اس بار امریکہ کے لیے امداد میں بیس ارب ڈالر کی کٹوتی کی جائے گی۔ اور امریکہ اس بات کی یقین دہانی کروائے بغیر ہم سے مزید جے ایف51 طیارے نہیں لے سکتا کہ وہ آئندہ چین سے پنگا نہیں لے گا۔ پاکستان میں کام کرنے والے تمام غیر ملکی بشمول آسٹریلین، یورپین اور امریکن کے ورک پرمٹ ری نیو نہیں کیے جائیں گے اور نہ ہی نئے ویزے جاری کیے جائیں گے۔ اور انڈیا کی معاشی میدان میں مدد اور تعاون جاری رکھا جائےگا۔ ایک مضبوط اور پرامن بھارت پاکستان کے مفاد میں ہے۔\n\nمنظر بدلتا ہے۔\nاللہ دتہ ایک بغیر چھت کی جیپ چلا رہا ہے اور جینز، ٹی شرٹ پہنے بڑا عجیب سا لگ رہا ہے۔ اس کے ساتھ اگلی سیٹ پر فلم اسٹار کترینہ اور کرینہ موجود ہیں۔ پچھلی سیٹ پر مادھوی اور پریٹی زینٹا خوشگوار موڈ میں بیٹھی ہیں۔ تمام مستورات اللہ دتہ پر صدقے واری جا رہی ہیں۔ کوئی چوڑیاں لے کر دینے کی فرمائش کر رہی ہے تو کوئی گول گپے کھلانے کی۔ اللہ دتہ مونچھوں کو تائو دیتے ہوئے مسکراتا جا رہا ہے۔\nمیرا خیال ہے ہمیں اب اللہ دتہ کو تھوڑی پرائیویسی دینی چاہیے۔ اتنا تو عام آدمی کا بھی حق بنتا ہے۔ ویسے بھی کافی دیر ہو چکی ہے۔ ہم واپس اپنی دنیا میں چلتے ہیں۔

Comments

ریحان اصغر سید

ریحان اصغر سید

ریحان اصغر سید فکشن اور طنز و مزاح لکھنے میں خصوصی دلچسپی رکھتے ہیں۔ کم مگر اچھا اور معیاری لکھتے ہیں۔

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com
/* ]]> */