تو کیا آپ کو بھی سبز چائے پسند نہیں؟ حنا نرجس

حال ہی میں علم ہوا ہے کہ کچھ لوگوں کو سبز چائے سرے سے اچھی نہیں لگتی. بہت حیرت ہوئی. نہیں نہیں گھبرائیے نہیں. میں اس کے فوائد بتانے نہیں جا رہی. وہ تو پہلے سے آپ کے علم میں ہیں.\n\nبتانا صرف یہ ہے کہ اگر بالفرض آپ کو مختلف فلیورڈ پیکنگز والی چائے پسند نہیں ہے تو نہ پیئں. مقامی کمپنیز کے کچھ فلیورز مجھے بھی اچھے نہیں لگتے. ویسے اچھی اور مہنگی کمپنیز کی فلیورڈ چائے بہت مزے کی ہوتی ہے. مجھے تو میری چھوٹی بہن تحفے میں دیتی ہے. اب بھی یو ایس سے آئی تو کافی سارے فلیورز دیے. شکریہ، ڈیئر سسٹر!\n\nجی جی بالکل میں آپ ہی کے مسئلے کے حل کی طرف آ رہی ہوں. تو آپ ایسا کریں سادہ کابلی یا افغانی گرین ٹی/قہوہ لیں اور اپنی پسند کے مطابق بدل بدل کر مختلف اشیاء کا اضافہ کر کے نت نئے فلیورز بنائیں اور لطف اٹھائیں. جیسے\n\nالائچی اور گلِ بادیان \nالائچی اور دارچینی \nسونف اور ادرک \nلیموں اور شہد\nپودینہ کے چند تازہ پتے \n(مزید کے لیے کمنٹس چیک کرتے رہیے گا. کارآمد اضافے کی قوی امید ہے.\n\nاپنی مرضی کا کوئی بھی کمبینیشن بنائیں. ایک وقت میں ایک، دو، تین جتنی چیزوں کا چاہیں اضافہ کریں. لیموں اور شہد تو ہر فلیور کے ساتھ ہی اچھے لگتے ہیں. الائچی اور دارچینی کو خود گرائنڈ کر کے الگ الگ چھوٹے جارز میں ڈال کر رکھیں. ایک کپ کے لیے ایک ہلکی سی چٹکی کافی ہے. زیادہ مقدار میں پیس کر نہ رکھیں، خوشبو و ذائقہ متاثر ہوتا ہے.\n\nاب یہ ایک الگ بحث ہے کہ چائے، خواہ کوئی سی بھی ہو، خود بنا کر پینی چاہیے یا بس بیٹھے بٹھائے مطلوبہ فلیور کے ساتھ چائے حاضر کیے جانے کا آرڈر کرنا چاہیے. \nاسے فی الحال کسی اور وقت کے لیے اٹھا رکھتے ہیں.

Comments

حنا نرجس

حنا نرجس

اللّٰہ رب العزت سے شدید محبت کرتی ہیں. ہر ایک کے ساتھ مخلص ہیں. مسلسل پڑھنے پڑھانے اور سیکھنے سکھانے پر یقین رکھتی ہیں. سائنس، ٹیکنالوجی، ادب، طب اور گھر داری میں دلچسپی ہے. ذہین اور با حیا لوگوں سے بہت جلد متاثر ہوتی ہیں.

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.