اٹھ سسیے بے خبرے - ڈاکٹر رابعہ خرم درانی

اےمسیحا تیرا دم غنیمت۔ لیکن کتب ایسا بیش قیمت خزانہ ردی فروش کو کیونکر تھما دیں؟ لوازمات حرف و قرطاس کو تہہ خانے میں مقید کیے دیتے ہو، کیا اذہان میں قفل نہ پڑجاویں گے۔ کجی دریا میں بہا دیں گے تو اذہان کے کہنہ کواڑوں پہ دستک کیسے پڑےگی۔ نونہالان کا تجسس کہنہ سال کیوں نہیں اپنائے لیتے کہ حیات کی...