ثبات اک تغیر کو ہے - عابد ایوب اعوان

آئینی شق،62 ون ایف کی رو سے تاحیات نااہلی ہو گئی، نااہل نظریاتی تو نہ تھے مگر اب تاحیات نظریاتی رہیں گے۔ یا مرتا کیا نہ کرتا کی مصداق نظریاتی ہونے کا جاپ کرتے رہیں گے۔ آخر یہ نوٹنکی کب تک چلے گی؟ یہ تو وقت بتائے گا اور تاریخ ثابت کرے گی کہ تاحیات نااہلی کا عدالتی فیصلہ (جو کہ پارلیمان ہی کرتی تو...