یہ جمہوریت کا مقدمہ نہیں، ذاتی لڑائی ہے - محمد عامر خاکوانی

معاف کیجیے میاں صاحب، آپ کاغصے سے تمتماتا چہرہ، چنگاریاں برساتی آنکھیں اور شعلے برساتی تقریریں سننے کے باوجود ہم ابھی تک قائل نہیں ہوسکے کہ یہ جمہوریت کا مقدمہ ہے۔ یہ آپ کی ذاتی لڑائی نظر آ رہی ہے۔ وہ لڑائی جو آپ عدالت اور قانون کے میدان میں ہار چکے ہیں۔ اپنی اس شکست کو فتح میں بدلنے کے لئے اب...