رقص اور ماتم ساتھ ساتھ – ارشد زمان

ڈان نیوز کے پروگرام ذرا ہٹ کے، میں مبشر زیدی، وسعت اللہ خان اور ضرار کھوڑو بہت جھنجھلاہٹ اور کنفیوژن کےعالم میں پتہ نہیں کیا کہنا چاہ رہے تھے؟ انھیں اعتراض تھا کہ کراچی میں کیوں”تحفظ اسلام“ کے نام پہ اور ”توہین رسالت“ کےخلاف ریلی نکالی گئی؟ اور کیوں توہین مذہب اور توہین رسالت پہ مزید پڑھیں

گمشدہ افراد بلاگر تھے یا کچھ اور؟ سید معظم معین

طوفان اٹھ رہا ہے کہ بلاگرز اٹھا لئے گئے آزادی اظہار رائے کو دبا دیا گیا۔ امریکہ اور برطانیہ تک کی حکومتیں ہل کر رہ گئیں کہ گمشدہ بلاگرز کا کیا بنے گا۔ گمشدہ بلاگرز کے اہل خانہ بھی پریشان ہیں کہ ان کے پیاروں کا مستقبل کیا ہو گا۔ ہر طرف چیخ و پکار مزید پڑھیں

جبری گمشدگی؛ قانون و اخلاقیات، چند اہم سوالات – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

کئی دنوں سے اس موضوع پر لکھنے کا ارادہ تھا لیکن مصروفیات کی وجہ سے وقت نہیں ملا۔ اس دوران میں کئی اہل علم و قلم نے اس موضوع کے مختلف پہلوؤں پر اپنی رائے کا اظہار کیا ہے۔ کسی نے حقوقِ انسانی کی دہائی دی ہے، تو کوئی دہائی دینے والوں کے ”دوغلے پن“ مزید پڑھیں

سہولت کاروں کے خلاف کارروائی کریں – محمد بھٹی

گزشتہ دنوں ایک شخص کی گمشدگی کا بہت شور و غوغا سنا۔ ہیومن رائٹس ایکٹوسٹ طیش میں نظر آئے۔ سوچا کہ دیکھوں کہ آخر معاملہ کیا ہے۔ معمولی تگ و دو کے بعد معلوم پڑا کہ راولپنڈی کے ایک تعلیمی ادارے کے لیکچرار سلمان حیدر کو بمع دو ساتھیوں کے اچک لیا گیا ہے، اور مزید پڑھیں

غائب نہیں، حاضر کیجیے – عاطف الیاس

پچھلے چند دنوں سے سوشل میڈیا کے سیکولر اور لبرل مےخانوں میں، وہ عظیم ہنگامہ برپا ہے کہ تھوڑی سی پینے کا الزام بھی چھوٹا سا لگ رہا ہے۔ غضب خدا کا یک نہ شد چہار شد، وہ بھی اکٹھے۔ اوپر والوں کو بھی کچھ خیال کرنا چاہیے، اگر سارے اندر ہوں گے تو موچی مزید پڑھیں

لبرل ازم اور سلمان حیدر – ڈاکٹر رانا تنویر قاسم

لبرل ازم اور سیکولرازم کی آڑ میں اسلام اور مسلم سماج پر جہاں فکری یلغار جاری ہے، وہاں سرمایہ دارانہ استعمار اور ’’انتہا پسندی‘‘ و ’’دہشت گردی‘‘ جیسے مذموم نعروں کی آڑ میں بعض طبقات کا بڑے پیمانہ پر استحصال بھی ہو رہا ہے۔ کمیونزم اور سوشلزم کی شکست کے باوجود مذکورہ دونوں نظریات اپنی مزید پڑھیں

لاپتہ ایڈمنز اوردست وگریباں عوام – محمد علی نقی

گزشتہ کچھ دنوں سے جس طرح فیس بک پیجز کے ایڈمنز لاپتہ ہوئے ہیں، اسی طرح سوشل میڈیا میدان جنگ کا روپ دھار چکا ہے. مختلف نظریات رکھنے والے لوگ ان واقعات کو مختلف زاویوں سے دیکھ رہے ہیں، کہیں سے اداروں پر انگلی اٹھائی جارہی ہے تو کچھ اس بات کے قائل ہیں کہ مزید پڑھیں

توہین مذہب، فیس بکی عدالتیں اور انسانی حقوق – علی ملک

معروف سماجی کارکن جبران ناصر نے اپنے ویڈیو پیغام کے ذریعے قانون کی بالادستی کی بات کی ہے، سوال یہ ہے کہ یہ قانون کی بالادستی اب کیوں یاد آ رہی ہے؟ جبران ناصر کا ویڈیو پیغام بھینسا، موچی، روشنی جیسے پیجز کروڑوں مسلمانوں کی دل آزاری کا باعث تھے. ریاست، فوج، پاکستان، نظریہ پاکستان مزید پڑھیں

اصولی مؤقف اور دانشوری مورچے – رعایت اللہ فاروقی

فیس بک پر کئی بار یہ گزارش کر چکا ہوں کہ چیلنج صرف وہ دہشت گرد نہیں ہیں جو دشمن ممالک کے اشارے پر پاکستان کے خلاف ان کے عزائم کو آگے بڑھا رہے ہیں بلکہ وہ بھی ہیں جو ان ممالک سے فنڈز لے کر ”دانشوری مورچے“ کا استعمال کرکے بیرونی ایجنڈوں پر کام مزید پڑھیں

یہ ظلم ہے – زبیر منصوری

سلمان حیدر کو اٹھا لیا گیا، پولیو کا مریض نصیر دکان سے غائب کر دیا گیا، وقاص گورایہ اور عاصم بھی غائب ہیں. کیوں؟ اس لیے کہ یہ لوگ بولتے ہیں، لکھتے ہیں، اپنی رائے کا اظہار کرتے ہیں، اور یہ آپ کی طبعیت پر بوجھ بنتا ہے. یہ آپ کو ”کار سرکار“ میں مداخلت مزید پڑھیں