”ادّھا“ – گلزار کا شاہکار افسانہ

سب اُسے ”ادّھا“ کہہ کے بلاتے تھے۔ پورا کیا، پونا کیا،بس ادّھا۔۔۔ قد کا بونا جو تھا۔ پتا نہیں کس نے نام رکھا تھا۔ ماں باپ ہوتے تو ان سے پوچھتا۔\r\n\r\nجب سے ہوش سنبھالا تھا، یہی نام سنا تھا اور یہ بھی نہیں کہ کبھی کوئی تکلیف ہوئی ہو۔ دل دُ کھا ہو۔ کچھ نہیں۔ مزید پڑھیں

محبّت، ضرورت اور انا پرست – تصوّر حسین خیال

\r\nمحبّت کا موضوع انسانی تاریخ جتنا ہی قدیم ہے۔ انسانیت کا واسطہ تب پڑا جب موضوعات تعریف و تشریح کے محتاج نہیں تھے۔ وجود تھا، وضاحت ضروری نہیں تھی۔ قلم آزمائی بارہا ہوئی۔ اپنے اپنے تجربے تشریحات کی صورت تحریر کیے گئے۔ مگر موضوع سیر نہ ہوسکا۔ صحراؤں جیسی تشنگی ابھی بھی بڑے بڑے لکھاریوں مزید پڑھیں

جنید جمشید کی جدائی پر ایک ہندوستانی شاعر کی اثر انگیز نظم

نسیم مشکبار بھی کیوں آج سوگوار ہے\r\n یہ کون چل بسا یہاں ہر آنکھ اشکبار ہے\r\n نسیم صبح کہہ گئی دلوں پہ برق پڑ گئی\r\n چراغ تھا جو بجھ گیا وہ انجمن اجڑ گئی\r\n وہ مہوشوں کی ٹولیاں وہ بزم جاں بچھڑ گئی\r\nفسردہ نظم ہی نہیں غزل بھی بے قرار ہے\r\n یہ کون چل بسا مزید پڑھیں

ٹارگٹ – حمیرہ خاتون

”مس، کل ہماری گلی میں رات کو ایک بہت بڑا پروگرام ہے جس میں سب نعتیں پڑھیں گے۔“ عمران نے بہت ہی خوشی سے اپنی ٹیچر کو بتایا۔\r\n”اور مس، وہ جو ٹی وی میں آتے ہیں نا، وہ بھی آئیں گے۔“ عابد نے بڑے پرجوش لہجے میں بتایا۔\r\n”اچھا، یہ تو بہت ہی اچھی بات ہے۔“ مزید پڑھیں

شہروالو! ہوشیار ہوجائو! – شفق حیات

ایک عورت نے اپنے شوہر کو دفتر فون کیا اور پوچھا: ’’آپ مصروف تو نہیں؟‘‘ شوہر نے دانت پیس کر کہا: ’’میں اس وقت میٹنگ میں ہوں۔ کیوں فون کیا ہے؟‘‘ جواب آیا: ’’آپ کو ایک اچھی اور ایک بری خبر سنانی تھی۔‘‘ شوہر گرجا: ’’خبردار جو کوئی بری خبر سنائی، بتاؤ اچھی خبر کیا مزید پڑھیں

گل باتیا – پروفیسر سلمان باسط

پرانے وقتوں میں کسی قلم رو کا شہزادہ ملک شام یا ملک یمن کی سیاحت کو جاتا۔ گھومتا پھرتا، پانچ سات شرطیں پوری کرتا، ایک آدھ شہزادی سے شادی کرتا اور واپس آکر کاروبار سلطنت میں اس طرح کھو جاتا کہ اسے سفر نامہ لکھنے کا خیال تک نہ آتا۔ یوں اس جیسے تمام شہزادوں مزید پڑھیں

سمے کا بندھن – ممتاز مفتی

آپی کہا کرتی تھی ’’سنہرے، سمے سمے کی بات ہوتی ہے۔ ہر سمے کا اپنا رنگ، اپنا اثر ہوتا ہے۔ اپنا سمے پہچان، سنہرے۔ اپنے سمے سے باہر نہ نکل۔ جو نکلی تو بھٹک جائے گی۔\r\n\r\nاب سمجھ میں آئی آپی کی بات۔ جب سمجھ لیتی تو رستے سے نہ بھٹکتی، آلنے سے نہ گرتی۔ سمجھ مزید پڑھیں

آپا زاہدہ حنا کا مطالعہ – احمد حاطب صدیقی

ہر چند کہ ہمارا شمار ’’اہل علم‘‘ میں نہیں ہوتا، مگر حصولِ علم کا شوق ہمارے اندر بھی اسی طرح بھرا ہوا ہے، جس طرح ہمارے شہر کی ویگنوں میں مسافر بھرے جاتے ہیں… (یعنی ”کوٹ کوٹ کر“)… اور علم حاصل کرنے کا یہ… ”شوق حد سے زیاد ہے ہم کو“… اتنا ”زیاد“ کہ ہم مزید پڑھیں

خواہشوں کے سراب – حنا تحسین طالب

خواہشوں کی طلب میں بھٹکنا نہیں\r\nخواہشوں کے سراب \r\nرول دیتے ہیں اپنے طلبگار کو\r\nتشنگی کو دلوں کی مٹاتے نہیں\r\nخواہشوں کا خمار\r\nطاری ہوتا ہے جب\r\nڈھانپ لیتا ہے دل کو\r\nنظر کو فہم کو\r\nسوجھتا کچھ نھیں\r\n فرق دکھتا ہے کب\r\nدھوپ میں چھاؤں میں\r\nنار و گلزار میں\r\nخواہشوں کے عتاب \r\nاپنے معتوب کو\r\nجینے دیتے ہیں کب\r\nمرنے دیتے کہاں\r\nعالم مرگ ہی مزید پڑھیں

صحن میں دیوار کے….. – فیض محمد شیخ

صحن میں دیوار کے سائے پہ اک دیوار ہے\r\nبھائی اپنے بھائی سے ہی اس قدر بے زار ہے\r\n\r\nجانے کس نے نوچ ڈالا پھول کا نازک بدن\r\nآہ کس سے ہم کہیں کیا حالت گلزار ہے\r\n\r\nوقت ایسا آ پڑا ہے آج ساری قوم پر\r\nخون کی سرخی سے تر ہر صفحہ اخبار ہے\r\n\r\nہاتھ چھالوں سے بھرے ہیں ، مزید پڑھیں