سہاگن – ڈاکٹر رضی الاسلام ندوی

شادی کی تقریب میں بہت ہمہ ہمی تھی. خواتین اور لڑکیاں بھی بڑی تعداد میں شریک تھیں. زرق برق لباس، بدن پر سجے زیورات، قہقہے اور خوش گپّیاں تقریب کی زینت بڑھا رہے تھے. ایک بزرگ خاتون کو مرکزی حیثیت حاصل تھی، اس لیے کہ بہت سی لڑکیاں انھیں گھیرے ہوئے تھیں اور ان کی مزید پڑھیں

عبث ہے شکوہ کہ اس ملک کا دستور یہی ہے – راؤ صمد

وہ اپنے والدین کا بہت ہی لاڈلا بیٹا تھا۔ اپنے بہن بھائیوں میں سب سے بڑا تھا، اس لیے والدین نے بہت سی امیدیں وابستہ کر رکھی تھیں اور اسے اس بات کا احساس بھی تھا ۔ وہ چاہتا تھا کہ جلد کسی جگہ سیٹ ہو اور اپنے بیمار والد کو آرام کروا سکے ، مزید پڑھیں

ہاکنز سے ڈاکنز تک – ثمینہ رشید

نام کتاب : ہاکنز سے ڈاکنز تک (مغرب کیا سوچ رہا ہے) نام مصنف : تنزیل الرحمن ناشر : بک ٹائم، اردو بازار کراچی ہاکنز سے ڈاکنز تک (مغرب کیا سوچ رہا ہے)، تنزیل الرحمن کی پہلی تصنیف ہے لیکن کتاب کو پڑھنے کے بعد آپ کے لیے یہ فیصلہ کرنا دشوار ہوگا کہ یہ مزید پڑھیں

بڑے چوہدری کی پیشگوئی – تاج رحیم

نام تو اس کا عبدالرشید تھامگر نجانے سکول میں سب اسے “گاندھی” کیوں کہتے تھے؟ قد چھوٹا تھا مگر باتونی بہت تھا۔ میٹرک کے بعد اس نے مال روڈ پر کنڈا والا شو روم میں نوکری کرلی۔ جبکہ ہمارے گروپ کے دوسرے دوستوں نے لاہور کے مختلف کالجوں میں داخلے لے لئے۔ یہ 1957ء کا مزید پڑھیں

تین مائیں – طلحہ ادریس

ایک بڑھیا پانی کا گھڑا سر پرا ٹھائے کنویں کی طرف چلی جارہی تھی۔ اُس روز ذرا تاخیر ہوگئی تھی۔ گھر سے نکلتے ہی تین خواتین اور بھی اُن کے ہمراہ ہوگئیں۔ بڑھیا کو سب بڑے چھوٹے خالہ کہا کرتے تھے۔ گاؤں میں چونکہ پانی دستیاب نہ تھا، اِسی لیے خواتین دیگر بہت سے کاموں مزید پڑھیں

خدا کا جواب – لالہ صحرائی

ایک خاتون اپنی ڈیوٹی پر تھی جب اسے گھر سے فون کال موصول ہوئی کہ آپ کی بیٹی سخت علیل ہے، اچانک اسے بخار ہوگیا ہے جو لمحہ بہ لمحہ تیزتر ہوتا جا رہا ہے۔ خاتون گھر کے لیے روانہ ہوئی اور راستے میں ایک فارمیسی پر دوا لینے کے لیے رک گئی، جب واپس مزید پڑھیں

میرامطالعہ – سہیل بشیرکار

جس طرح جسمانی غذا کی ضروریات کے لئے کھانا پینا لازم ہے اور روحانی ارتقاء کے لئے عبادات اہم ہیں، اسی طرح علمی ضروریات کے لئے مطالعہ اہمیت رکھتاہے۔ مشہور چینی مقولہ ہے ’’جس روزکوئی شخص اپنے مطالعہ اورمعلومات میں اضافہ نہیں کرتا وہ دن اس کے لئے بے کارجاتاہے ‘‘۔ ترقی یافتہ قوموں کے مزید پڑھیں

عمر عبداللہ! تیرے عشق کے نصیب – سائرہ ممتاز

منزلوں کے راستے سیدھے ہوں تو زمین قدموں کو گھسیٹتی نہیں بلکہ خود سمٹ سمٹ کر فاصلہ دوگام کرتی جاتی ہے. راہی روہی راستہ، رستگاری، ہشیاری سب عدم سے معدوم اور معدوم سے معلوم کی منزلیں قرار پاتی ہیں. ڈوب ڈوب کر ابھرنے والے تیرنا سیکھ جاتے ہیں اور درد کو دوائے دل بنانے والے مزید پڑھیں

میں غیر مرد کی محتاج نہیں – الماس چیمہ

میرا نام لاریب ہے. کالج میں ایک لڑکے نے مجھ سے اظہار محبت کیا. اسے میں نے بہت سمجھایا لیکن اُسے ذرا اثر نہیں ہوا. وہ کٹر ٹھرکی تھا یا پھر اس بات پر یقین رکھتا تھا کہ کوشش جاری رکھو، ایک نہ ایک دن مان ہی جائے گی. میں اُس کی باتیں سن کر مزید پڑھیں

سلامتی – عالیہ ذوالقرنین

“پٹاخ” کی زور دار آواز کے ساتھ فرخ کا پھینکا ھوا پٹاخہ گلی سے گزرنے والے کتے کے پاؤں کے پاس پھٹا اور وہ درد ناک آواز نکالتا اور لنگڑاتا ہوا ایک طرف بھاگا ۔ فرخ اور اس کے شرارتی دوست مل کر اس منظر سے لطف اندوز ہوئے اور ایک دوسرے کے ہاتھ پر مزید پڑھیں