ڈاکٹر رابعہ خرم درانی

دل میں جملوں کی صورت مجسم ہونے والے خیالات کو قرطاس پر اتارنا اگر شاعری ہے تو رابعہ خرم شاعرہ ہیں، اگر زندگی میں رنگ بھرنا آرٹ ہے تو آرٹسٹ ہیں۔ سلسلہ روزگار مسیحائی ہے. ڈاکٹر ہونے کے باوجود فطرت کا مشاہدہ تیز ہے، قلم شعر و نثر سے پورا پورا انصاف کرتا ہے-

فیس بک پروفائل ٹوئٹر پروفائل
سبسکرائب کریں
X

سبسکرائب کریں

E-mail :*

آج مل لو باہر کہیں – ڈاکٹر رابعہ خرم درانی

نہیں! میرے بھیا بھابھی بڑے سخت ہیں‌، کیا کہوں گی. یار کوئی بہانہ کر دینا. اچھا سہیلی کی شادی میں رات رکنے کا کہہ دینا. میں بھی نکل آؤں گا. بیوی بچے نانی کے گھر جا رہے ہیں. دیکھو! اگر تم نہ آئی تو مجھے بھول ہی جاؤ. لڑکی کی شادی ٹوٹ چکی، وہ یہ مزید پڑھیں