ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
ڈاکٹر محمد مشتاق احمد بین الاقوامی اسلامی یونی ورسٹی، اسلام آباد کے شعبۂ قانون کے چیئرمین ہیں ۔ ایل ایل ایم کا مقالہ بین الاقوامی قانون میں جنگِ آزادی کے جواز پر، اور پی ایچ ڈی کا مقالہ پاکستانی فوجداری قانون کے بعض پیچیدہ مسائل اسلامی قانون کی روشنی میں حل کرنے کے موضوع پر لکھا۔ افراد کے بجائے قانون کی حکمرانی پر یقین رکھتے ہیں اور جبر کے بجائے علم کے ذریعے تبدیلی کے قائل ہیں۔
فیس بک پروفائل
ٹوئٹر پروفائل
سبسکرائب کریں
X

سبسکرائب کریں

E-mail :*

قطری شہزادے کا خط، چند مزید سوالات – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

اس خط کا عکس جناب احمد علی کاظمی صاحب نے عنایت کیا ہے ۔اللہ تعالیٰ انھیں جزائے خیر سے نوازے۔ (یہ لفظ خالص دعا کے مفہوم میں استعمال کیا گیا ہے اور اس کا کاظمی صاحب کی حکومت نوازی سے، یا نواز حکومت کے نوازنے کی پالیسی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔)\n\nسب سے پہلے تو مزید پڑھیں

تکفیر اور انتہا پسندی: غامدی صاحب کے حلقے سے پانچ سوال – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
حدود کی تعریف اور نظریۂ حد کا ارتقا – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
اہل کتاب کے ساتھ دوستانہ روابط کے لیے نکاح کی حلت سے استدلال – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
خروج کے متعلق حنفی مذہب؛ علامہ شامی کی تحقیق – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
سانحۂ کربلا، اعتباری شخصیت اور مطلق العنانیت: چند قابلِ غور پہلو – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
روم و فارس کے ساتھ صحابۂ کرام کی جنگیں؛ اتمامِ حجت، دفاع یا کچھ اور؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
الزام، گواہی، صفائی، فیصلہ: سب کچھ عدالت کے بغیر – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
ظالم یا غاصب حکمران کے خلاف خروج کا مسئلہ – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
ڈاکٹر محمود احمد غازی رحمہ اللہ، چند خوشگوار یادیں – محمد مشتاق احمد
قطعی الدلالہ اور ظنی الدلالہ یا واضح الدلالہ اور خفی الدلالہ – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
قطعی الدلالہ یا ظنی الدلالہ : اصل مسئلہ کیا ہے؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
یوم عرفہ اور رؤیت ہلال – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
یحیٰ بختیار کو نہ بھولیے – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
عدلیہ کی شریعت، جنابِ والا! عمران احسن خان نیازی
کیا پاکستان میں”دوہری حکومت“ (Diarchy) کا نظام ہے؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد