ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

ڈاکٹر محمد مشتاق احمد بین الاقوامی اسلامی یونی ورسٹی، اسلام آباد کے شعبۂ قانون کے چیئرمین ہیں ۔ ایل ایل ایم کا مقالہ بین الاقوامی قانون میں جنگِ آزادی کے جواز پر، اور پی ایچ ڈی کا مقالہ پاکستانی فوجداری قانون کے بعض پیچیدہ مسائل اسلامی قانون کی روشنی میں حل کرنے کے موضوع پر لکھا۔ افراد کے بجائے قانون کی حکمرانی پر یقین رکھتے ہیں اور جبر کے بجائے علم کے ذریعے تبدیلی کے قائل ہیں۔

فیس بک پروفائل ٹوئٹر پروفائل
سبسکرائب کریں
X

سبسکرائب کریں

E-mail :*

”اسلامی“ بینکاری پر اہم کتب – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد

ہمارے نزدیک ”اسلامی“ بینکاری بالکل ہی غلط بنیادوں پر قائم کی گئی ہے اور اسی لیے جزوی تبدیلیوں سے اس کی اصلاح ممکن نہیں ہے۔ اس موضوع پر پہلے بھی کئی مرتبہ تفصیلی گزارشات پیش کی گئی ہیں۔ کئی احباب کا مطالبہ ہے کہ اس موضوع پر اہم کتب کا تعارف کروایا جائے۔ میں یہاں مزید پڑھیں

صوبائیت کی لعنت اور ہمارے اہل علم – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
دیت، عاقلہ اور ٹریفک حادثات – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
پاناما لیکس پر سپریم کورٹ کا فیصلہ، مقامِ شکر تو یقیناً ہے – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
دنیا بلیک اینڈ وہائٹ نہیں ہے – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
پرویز رشید صاحب کی رخصتی – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
اسلام آباد ہائیکورٹ کا عجیب و غریب فیصلہ – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
اگر دھرنا کامیاب ہوجائے! ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
دل کا حال کیسے معلوم ہوتا ہے؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
تکفیر اور انتہا پسندی: غامدی صاحب کے حلقے سے پانچ سوال – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
حدود کی تعریف اور نظریۂ حد کا ارتقا – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
اہل کتاب کے ساتھ دوستانہ روابط کے لیے نکاح کی حلت سے استدلال – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
خروج کے متعلق حنفی مذہب؛ علامہ شامی کی تحقیق – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
سانحۂ کربلا، اعتباری شخصیت اور مطلق العنانیت: چند قابلِ غور پہلو – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
روم و فارس کے ساتھ صحابۂ کرام کی جنگیں؛ اتمامِ حجت، دفاع یا کچھ اور؟ ڈاکٹر محمد مشتاق احمد
الزام، گواہی، صفائی، فیصلہ: سب کچھ عدالت کے بغیر – ڈاکٹر محمد مشتاق احمد