اللہ محبت سے دیکھ رہا ہے – زبیر منصوری

میری درخواست ہے کچھ دیر کے لئے آنکھیں بند کر لیں۔ پر سکون ہو جائیں ارام سے کہیں بیٹھ جائیں اور تصور کریں کہ ایک دیوار چین جیسی لمبی چوڑی دیوار تعمیر ہو رہی ہے اس کے مختلف حصوں پر بیک وقت مختلف مستری مزدور انجینئیر کارپینٹر کام کر رہے ہیں ایک بڑا ماہر آرکیٹیکٹ اس سارے منصوبے کا نگران اورخالق ہے اور جزئیات تک اس کے ذہن اور پلان میں لکھی ہوئی موجود ہیں وہ سارے کام کو دیکھ رہا ہے اگر اس تعمیر کے کام میں لگے ہوئے لوگ پریشان ہونے لگیں کہ کام کیسے ہو گا؟

یہاں تو میں کر رہا ہوں پتہ نہیں کوئی اور بھی کر رہا ہے؟ کیسا کر رہا ہے؟ کوئی نگرانی نہیں ہو رہی ؟ کہیں ایسا نہ ہو جائے کہیں ویسا نہ ہو جائے ایسے میں وہ نگران نرمی سے انہیں سمجھاتا ہے کہ مایوس نہ ہو میں ہوں نا؟ سب کچھ میرے نقشے کے مطابق ہے میری اجازت سے ہے میرے علم میں ہے تم بس اپنے حصہ کا کام کر دو پھر دیکھنا یہ پورا منصوبہ مکمل بھی ہو گا اور میری خواہش کے مطابق ہو گا شاباش ڈٹ کر اپنے حصے کی دیوار بناو اور کام کرو اور

باقی کا مجھ پر چھوڑ دو ۔۔۔ اس مثال میں دیوار اسلامی نظام ہے مزدور وہ قوتیں ہیں جو اللہ کی وفا دار ہیں ارکیٹیکٹ اللہ جل جلالہ پھر خوف کس بات کا ؟ مایوسی کیسی؟ خدا کی قسم کوئی کچا پکا گھر ایسا نہیں رہے گا جس میں اللہ کا دین داخل نہ ہو۔۔ بس آپ اپنے حصے کی نتیجہ خیز جدوجہد میں مسلسل لگے رہئیے۔۔ اللہ بہت محبت سے آپ کو دیکھ رہا ہے

زبیر منصوری

زبیر منصوری جامعہ منصورہ سندھ سے علم دین اور جامعہ کراچی سے جرنلزم، اور پبلک ایڈمنسٹریشن کی تعلیم حاصل کی، دو دہائیاں پہلے "قلم قبیلہ" کے ساتھ وابستہ ہوئے۔ ٹرینر اور استاد بھی ہیں. امید و محبت بانٹنا، اورخواب بننا اوربیچنا ان کا مشغلہ ہے۔ اب تک ڈیڑھ لاکھ نوجوانوں کو ورکشاپس کروا چکے ہیں۔

فیس بک تبصرے

تبصرے

Protected by WP Anti Spam