سوشل میڈیا گروپس کے چھتے اور بلاگز کے پتھر - زبیر منصوری

زبیر منصوری\nیاد رکھیے!\nاکثر زندگی میں آپ مجموعی طور پر اسی نوے فیصد درست ہوتے ہیں مگر لوگ یا آپ خود اپنی دس بیس فیصد خامیوں کو اتنا بڑھا چڑھا کر، ان کی گارنشنگ Garnishing کر کےان کو اتنا بڑا بنا دیتے ہیں کہ آپ کو لگتا ہے آپ بس برائیوں ہی کا مجموعہ ہیں۔ یہ خامی انسان سے کچھ کر گزرنے کا حوصلہ، ہمت، جذبہ چھین لیتی ہے اور اسے ایک بےمصرف چیز بنا دیتی ہے۔\n\nتوازن میرے پیارو توازن!\nاللہ نے ہمیں بڑے کاموں کے لیے پیدا کیا ہے اور اس میں خود احتسابی نہایت ضروری ہے مگر اتنی ہی کہ جتنی سالن میں نمک۔\nاور ہاں!\nضروری نہیں آپ کا کڑا احتساب کرنے والا آپ کا مخلص اور خیر خواہ ہی ہو، بس آپ کی اصلاح ہی چاہتا ہو، وہ کسی ویب سائٹ کا مالک بھی ہو سکتا ہے، لائیکس اور ویوز سے اس کی روزی روٹی بھی وابستہ ہو سکتی ہے، بےچارے کو اپنی نئی نویلی ویب سائٹ کے ”تقاضے“ بھی پورے کرنے ہوتے ہیں اور یہ تو آپ کو پتہ ہی ہے سوشل میڈیا پر عمران خان، جماعت اسلامی، متحدہ، نون لیگ یا کچھ چھوٹے موٹے دین دار گروپ ایکٹو ہیں، اس لیے آپ ان میں سے کسی کے ”چھتے“ میں بلاگ کا ”پتھر“ مار دیں اور جی بھر کے ویوز سمیٹ لیں وہ کیا کہتے ہیں کہ\n”ہینگ لگے نہ پھٹکری۔“\nاور ہاں اللہ نے ہر ایک کے حصہ کے بےوقوف پیدا جو کیے ہیں ،\nاب آپ اور میں سوچ لیں کہ ہم کس کے حصے کے ہیں؟\nکیا کہا نہیں بننا بے وقوف؟\nتو بس پھر ایسوں ویسوں کو توجہ دینا ذراچھوڑ دو پھر دیکھو۔\nہاں مگر مخلص، معتدل، دیانتداراور اللہ و رسول کے وفادار لکھاریوں کوضرور پڑھو۔\nکہتے ہیں دشمن پر نہیں، اس کی نفسیات پر حملہ کرو۔\nتھوڑے لکھے کو بہت جانو۔

Comments

زبیر منصوری

زبیر منصوری

زبیر منصوری نے جامعہ منصورہ سندھ سے علم دین اور جامعہ کراچی سے جرنلزم، اور پبلک ایڈمنسٹریشن کی تعلیم حاصل کی، دو دہائیاں پہلے "قلم قبیلہ" کے ساتھ وابستہ ہوئے۔ ٹرینر اور استاد بھی ہیں. امید محبت بانٹنا، خواب بننا اوربیچنا ان کا مشغلہ ہے۔ اب تک ڈیڑھ لاکھ نوجوانوں کو ورکشاپس کروا چکے ہیں۔

تبصرہ کرنے کے لیے کلک کریں