حضرت ابراہیم علیہ السلام کے اوصاف – ڈاکٹر رضی الاسلام ندوی

اُس بندے کی عظمت، بزرگی اور عند اللہ مقبولیت کا کوئی کیسے اندازہ لگا سکتا ہے، جس کے اوصاف اللہ تعالی خود بیان کرے_ قرآن کریم میں اللہ تعالی نے حضرت ابراہیم علیہ السلام کے درج ذیل اوصاف بیان کیے ہیں:\r\n1_حنیف (یک سو)\r\n”جو ہر ایک سے کٹ کر صرف اللہ کے لیے ہوکر رہے، جسے کوئی چیز حق کو قبول کرنے سے باز نہ رکھ سکے” \r\n(یہ صفت قرآن مجید میں حضرت ابراہیم علیہ السلام کے لیے 8 بار آئی ہے) \r\n2_شرک سے بیزار :\r\n’حنیف’سے ساتھ حضرت ابراہیم علیہ السلام کے لیے بار بار ‘مَا کانَ مِنَ المُشرِكِين’ اور ‘لَم یَکُ مِنَ المُشرِكِين’ کے الفاظ آئے ہیں_\r\n3_مسلم: \r\nمسلم کے معنی ہیں اپنے آپ کو اللہ کے حوالے کردینے والا_\r\n”اس کے رب نے کہا :”ل مسلم ہوجا“اس نے فوراًکہا :”میں مالکِ کائنات کا مسلم ہوگیا”(البقرۃ:131)\r\n4_اوّاہ: (التوبۃ :114 ،ھود :75)\r\n” رقیق القلب، خداترس، نرم دل “\r\n5_مُنیب: (ھود:75)\r\n”اللہ کی طرف رجوع کرنے والا،اس کی طرف بار بار پلٹنے والا “\r\n6_حلیم :(التوبۃ:114) \r\n” حلیم وہ شخص ہے جو غیظ و غضب کے موقع پر اپنے اوپر کنٹرول رکھے اور کوئی شخص بد سلوکی کرے تو اس کے جواب میں صبر و تحمّل کا مظاہرہ کرے“\r\n7صدّیق :(مریم :41) \r\nصدیق کا مطلب ہے :\r\n(1)حق کی تصدیق کرنے والا\r\n(2)آزمائشوں میں پورا اترنے والا (3)صداقت شعار اور راست باز_\r\n8_مہمان نواز \r\n(الذاریات:24)\r\n9_اللہ سے برابر دعا کرنے والا (مریم :48، البقرۃ:127_129،ابراہیم :35_41، الشعراء:83_89)\r\n10_عبادت گزار\r\n(الانبیاء:73،ابراہیم :40)\r\n11_والدین کے ساتھ حسن سلوک کرنے والا (مریم:42_45)\r\n12 بارگاہ الہی میں توبہ و استغفار کرنے والا (ابراہیم :41، الشعراء:82، الممتحنۃ:4_5)\r\n13_اللہ کی نعمتوں پر اس کا شکر گزار (النحل :121،الشعراء:77_82، العنكبوت :17،ابراہیم :39)\r\n14_صاحب قلبِ سلیم (الصافات:84)\r\n”ایسے دل کا مالک جو تمام اعتقادی و اخلاقی خرابیوں سے پاک ہو” \r\n15امۃ (النحل؛ 120) \r\n” اپنی ذات میں ایک امت، امام” \r\n16_قانت (النحل :120) “اللہ تعالی کا مطیعِ فرمان” \r\n17_آزمائشوں میں پورا اترنے والا (البقرۃ:124)\r\n18_مھاجر (العنكبوت :26) \r\n” اپنے رب کی طرف ہجرت کرنے والا، اس کی رضا کے لیے گھر بار، وطن، رشتے دار سب کو چھوڑ دینے والا” \r\nان اوصاف کی وجہ سے اللہ تعالی نے انھیں رہتی دنیا تک کے لیے تمام انسانوں کا امام بنادیا(البقرۃ :124)\r\nیہ اوصاف اپنے اندر پیدا کرکے ہم بھی اللہ کے مقرّب بندے بن سکتے ہیں_

ڈاکٹر رضی الاسلام ندوی

محمد رضی الاسلام ندوی نے ندوۃ العلماء لکھنؤ سے فراغت کے بعد علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے BUBS اورMD کیا. ادارہ تحقیق و تصنیف اسلامی ہند کے رفیق رہے. سہ ماہی تحقیقات اسلامی کے معاون مدیر اور جماعت اسلامی ہند کی تصنیفی اکیڈمی کے سکریٹری ہیں. قرآنیات اور سماجیات ان کی دل چسپی کے خاص موضوعات ہیں. عرب مصنفین کی متعدد اہم کتابوں کا اردو میں ترجمہ کیا ہے

فیس بک تبصرے

تبصرے

Protected by WP Anti Spam